Saturday , September 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / کڑپہ کے خانگی اسکول کے احاطہ سے 5نعشیں برآمد

کڑپہ کے خانگی اسکول کے احاطہ سے 5نعشیں برآمد

کڑپہ۔7اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کڑپہ کے نبکوٹ میں واقع زیان ہائی اسکول میں ایک دل دہلادینے والا واقعہ کا انکشاف ہوا ۔ پولیس نے اطلاع ملنے پر اسکول کے احاطہ میں پانچ لوگوں کی نعشوں کو کھود کر نکالا جو 26سالہ مونیکا انیراک ‘ 37سالہ کرپاکر انیراک ‘ 7سالہ اینجل ‘ 7سالہ راجیو اور 6سالہ پوترا کی ہیں ۔ ڈی ایس پی کڑپہ راجیشور ریڈی کی نگرانی

کڑپہ۔7اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کڑپہ کے نبکوٹ میں واقع زیان ہائی اسکول میں ایک دل دہلادینے والا واقعہ کا انکشاف ہوا ۔ پولیس نے اطلاع ملنے پر اسکول کے احاطہ میں پانچ لوگوں کی نعشوں کو کھود کر نکالا جو 26سالہ مونیکا انیراک ‘ 37سالہ کرپاکر انیراک ‘ 7سالہ اینجل ‘ 7سالہ راجیو اور 6سالہ پوترا کی ہیں ۔ ڈی ایس پی کڑپہ راجیشور ریڈی کی نگرانی میں پولیس نے یہ کارروائی کی ۔ یہ تمام افراد کڑپہ پیس کمیٹی کے جنرل سکریٹری کبیر ایوارڈ یافتہ راجا رتنم انیراک کے افراد خاندان ہیں ۔ پولیس ذرائع کے بموجب گذشتہ سال 2013ء میں مقتول مونیکا کی ماں سجاتا نے تعلقہ پولیس اسٹشین میں اپنی دختر مونیکا اور تین بچوں کی گمشدگی کی شکایت درج کروائی تھی ۔ پولیس نے لاپرواہی سے اس کیس کی تفتیش ہی نہیں کی ۔ اس سال اگست میں سجاتا نے دوبارہ ضلع ایس پی کڑپہ نوین گلاٹھی سے شکایت کی ۔ بعد ازاں راجا رتنم انیراک نے بھی اپنے فرزند کرپاکر انیراک کی گمشدگی کی ایس پی سے شکایت کی ۔ ایس پی نوین گلاٹھی نے دلچسپی لیتے ہوئے اس کیس کو پرودوٹور تری ٹاؤن کے انسپکٹر ستیہ نارائنا کے سپرد کیا ۔پولیس تفتیش کے دوران چونکا دینے والے انکشافات سامنے آئے جس کی بنیاد پر آج زیان ہائی اسکول کے گراونڈ میں کھدائی کر کے پانچ لاشوں کو جوبوسیدہ حالت میں تھے باہر نکالا گیا

اور فارنسک جانچ کیلئے روانہ کردیا گیا ۔ پولیس تفتیش پر معلوم ہوا ہے کہ گدشتہ سال 19اپریل 2013ء کو کرپاکر انیراک نے اپنی بیوی 26سالہ مونیکا انیراک پر ناجائزتعلقات کا شبہ کر کے اسے اپنے ڈرائیور رامانجیلو ریڈی ‘ اسکول کے ہیڈ ماسٹر رمنا ریڈی اور دو دیگر بھانو پرتاپ ‘ رتناکر ریڈی کی مدد سے ہلاک کردیا اور خاموشی سے اسکول کے کمپاؤنڈ میں ہی دفن کردیا ۔ 6ماہ بعد کرپاکر انیراک نے اپنے ڈرائیور رامانجیلو ریڈی ‘ رمنا ریڈی کی بیوی سجاتا کے ساتھ ملکر اپنے تینوں بچوں کو بھی گلا دباکر ہلاک کردیا اور اسکول کے گراؤنڈ میں ہی دفن کردیا ۔ ایک ماہ بعد رامانجیلو ریڈی ‘ رتناکر ریڈی اور رمنا ریڈی اسکول ہیڈ ماسٹر نے ملکر کرپاکر انیراک کو پھانسی لگاکر ہلاک کر کے اسکول گراؤنڈ میںہی دفن کردیا ۔ مقتول مونیکا کی ماں کی فریاد پر ضلع ایس پی نوین گلاٹھی نے خصوصی دلچسپی لے کر یہ کیس کی تفتیش کی جس سے ایک سال کے بعد تمام تفصیلات معلوم ہوئے ‘ خاطیوں کو پولیس نے گرفتار کر کے مزید تفتیش کررہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT