Monday , November 19 2018
Home / Top Stories / کھٹوعہ معاملہ دبانے کیلئے مسلمانوں کو تنگ کرنے کاالزام 

کھٹوعہ معاملہ دبانے کیلئے مسلمانوں کو تنگ کرنے کاالزام 

KASHMIR, SRINAGAR, JAMMU AND KASHMIR, INDIA - 2018/04/14: Kashmir Muslim hold placards during a protest demanding justice for Asifa Bano. Gujjar, Bakarwal and Traders association, Staged protest today at Srinagar, the summer capital of Indian administered Kashmir. Protesters were demanding justice for eight year old Ashifa Bano who was raped and murdered in Kathua district of Jammu region, after being drugged and tortured for several days inside a Hindu temple. Protesters during the protest said, This is a protest against the rape, torture and murder of an innocent girl, Ashifa Bano. This is a protest against the blatant attempts to communalise the case by Indian leaders.". (Photo by Masrat Zahra/SOPA Images/LightRocket via Getty Images)

جموں : گوجر بکروال طبقہ کے لوگوں نے یہاں جموں میں گوجر بکر وال دیش تحریک انصاف جموں نامی تنظیم کے بینر تلے احتجاج کیا ۔احتجاج کی قیادت کررہے چودھری نزاکت کٹھانا نے بتایا کہ جموں صوبہ خاص طور سے کٹھوعہ ، سانبہ ، جموں او ردودھم پور کے علاقوں میں مسلمانوں کاقافیہ حیات تنگ کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ کٹھوعہ گاؤں میں آٹھ سالہ معصوم خانہ بدوش بچی کے ساتھ عصمت ریزی او ر قتل کے معاملہ کو دبانے کیلئے مسلمانوں کو تنگ کیا جارہا ہے ۔

اس بچی کو انصاف دلانے کیلئے آواز بلند کرنے والے سماجی کارکن طالب حسین چودھری کے خلاف منصوبہ بند سازش کے تحت جھوٹا مقدمہ درج کیاگیا ۔نیز پولیس تھانہ سانبہ کے علاقہ میں شر پسندوں نے مبینہ طور پر گھس کر طالب حسین کو مارا پیٹا ۔ کھٹانا نے کہا کہ سابقہ وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر مرفد شاہ نامی نوجوان کی ہلاکت ، رام بن کے گول گلاب علاقہ میں مال مویشی کا کاروبار کرنے والے شخص کی فوج کی گولی سے ہلاکت جیسے واقعات جموں صوبہ میں مسلمانوں کے عدم تحفظ کاشکار ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ خطہ میں فرقہ وارانہ ماحول بنانے کیلئے فرقہ پرست طاقتیں سازشیں کررہی ہیں ۔کٹھانا نے گورنرسے اپیل کی کہ ہم آہنگی او رآپسی بھا ئی چارہ کو قائم رکھنے کیلئے مؤثر اقدامات کریں ۔

TOPPOPULARRECENT