Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / کیا مودی ’’کنویں کے مینڈک‘‘ بن کر رہیں؟ وینکیا نائیڈو

کیا مودی ’’کنویں کے مینڈک‘‘ بن کر رہیں؟ وینکیا نائیڈو

کانگریس کے ریمارک’’سیاح وزیراعظم‘‘ پر شدید ردعمل ، ملک کے مسائل کو حل کرنے بیرونی دوروں کا دعویٰ
حیدرآباد۔ 20 اگست (پی ٹی آئی) مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو نے آج کانگریس کو شدید تنقیدوں کا نشانہ بنایا جو نریندر مودی کو ’’سیاح وزیراعظم‘‘ قرار دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کیا کانگریس چاہتی ہے کہ وزیراعظم ’’کنویں کے مینڈک‘‘ کی طرح ایک ہی جگہ بیٹھیں رہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس قائدین یہ کہتے ہیں کہ نریندر مودی سیاح (وزیراعظم) ہیں۔ کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ انہیں صرف ایک ہی جگہ بیٹھیں رہنا چاہئے؟ کیا انہیں کنویں کے مینڈک کی طرح ہونا چاہئے؟ کسی کنویں میں مینڈک اندر بیٹھ کر صرف آواز کرتا ہے۔ لوک سبھا میں کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے نے کل نریندر مودی کو ’’سیاح وزیراعظم‘‘ سے تعبیر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کے پاس بیرونی ممالک میں تقریروں کے لئے وقت ہے لیکن پارلیمنٹ میں شرکت کیلئے وقت نہیں۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ گزشتہ سال جب این ڈی اے کو اقتدار حاصل ہوا، اس وقت ملک کئی مسائل جیسے کمزور معاشی ترقی، روپئے کی قدر میں گراوٹ اور مالیاتی خسارہ سے دوچار تھا اور مسابقت میں اسے دیگر ممالک کی صف میں لانے کیلئے ایسا کرنا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک کو دنیا کے دیگر ممالک کی صف میں لایا جانا ضروری ہے ۔ ہمارا ملک اس وقت جب ہم نے اقتدار حاصل کیا، کافی پیچھے تھا۔ دنیا آگے بڑھ رہی تھی اور ہمارا ملک پیچھے جارہا تھا۔ معاشی ترقی معکوس ہوگئی تھی۔ روپئے کی قدر گر گئی تھی۔ ہمیں اس حال میں اقتدار ملا جب مالیاتی خسارہ، تجارتی خسارہ، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ اور ان سب سے بڑھ کر بحیثیت مجموعی اعتماد کا خسارہ تھا۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ مودی اس صورتحال کو درست بنارہے ہیں اور اب حال یہ ہے کہ ایک سال میں شرح ترقی 4.6 فیصد سے بڑھ کر 7.3 فیصد ہوگئی ہے۔ مودی کی دنیا بھر میں سراہنا کی جارہی ہے۔ اس کا ایک ثبوت صدر امریکہ بارک اوباما کی دستخط کے ساتھ بین الاقوامی شمارہ میں آرٹیکل کی اشاعت ہے۔ صدر روس ولادیمیر پوٹن نے وزیراعظم کو ’’عوامی ہیرو‘‘ قرار دیا اور یو اے ای کی ولیعہد نے پروٹوکول کو نظرانداز کرتے ہوئے ایرپورٹ پہنچ کر شخصی طور پر مودی کا خیرمقدم کیا۔ اراضی بل کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کانگریس لیڈر راہول گاندھی کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

TOPPOPULARRECENT