Thursday , September 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / کیتھرین کی یو ایس اوپن میں سنسنی خیز کامیابی

کیتھرین کی یو ایس اوپن میں سنسنی خیز کامیابی

نیویارک۔ 27 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سیزن کے آخری گرانڈ سلام کے پہلے ہی راؤنڈ میں چونکا دینے والے سنسنی خیز نتائج دیکھنے کو ملے تاکہ جیسا کہ 15 سالہ مقامی ٹینس اسٹار کیتھرین ڈیلیس جنہوں نے اپریل میں اپنی 15 ویں سالگرہ منائی ہے اور عالمی درجہ بندی میں وہ 1208 ویں مقام پر فائز ہے لیکن انہوں نے ٹورنمنٹ کے پہلے راؤنڈ میں ڈومینیکا سیبولکووا کو 6-1 ،

نیویارک۔ 27 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سیزن کے آخری گرانڈ سلام کے پہلے ہی راؤنڈ میں چونکا دینے والے سنسنی خیز نتائج دیکھنے کو ملے تاکہ جیسا کہ 15 سالہ مقامی ٹینس اسٹار کیتھرین ڈیلیس جنہوں نے اپریل میں اپنی 15 ویں سالگرہ منائی ہے اور عالمی درجہ بندی میں وہ 1208 ویں مقام پر فائز ہے لیکن انہوں نے ٹورنمنٹ کے پہلے راؤنڈ میں ڈومینیکا سیبولکووا کو 6-1 ، 4-6، 6-4 سے شکست دیتے ہوئے یو ایس اوپن میں کامیابی کے ذریعہ کمسن کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرلیا ہے۔ قبل ازیں 1996ء میں اینا کورنیکووا نے یہ کارنامہ انجام دیا تھا جبکہ امریکی ٹینس اسٹار لینڈسے ڈیونپورٹ نے 1991ء میں 15 برس کی عمر میں خطاب حاصل کرنے کا ریکارڈ قائم کیا ہے۔ کامیابی کے بعد اظہار خیال کرتے ہوئے کیتھرین نے کہا کہ مقابلے کے آغاز سے قبل انہوں نے صرف اتنا ذہن بنایا تھا کہ گرانڈ سلام میں شرکت کرنا ان کے لئے ایک بہترین تجربہ ثابت ہوگا لیکن جو کامیابی حاصل ہوئی، وہ فہم و گمان میں ہی نہیں تھی۔ دریں اثناء روجر فیڈرر نے 2014ء سیزن میں 50 ویں کامیابی حاصل کرتے ہوئے ٹورنمنٹ کا کامیاب آغاز کیا ہے۔

فیڈرر جوکہ اپنے کریر کا متواتر 60 واں گرانڈ سلام کے پہلے راؤنڈ میں آسٹریا کے میرنکو ماٹوسیوک کو راست سیٹوں میں 6-3 ، 6-4 ، 7-6(7-4) کی شکست دی۔ حیران کن مقابلوں میں 17 سالہ کورک نے لوکاس روسن کو 6-4 ، 6-1 ، 6-2 سے شکست دیتے ہوئے گرانڈ سلام کریر کا شاندار آغاز کیا ہے۔ لوکاس وہی کھلاڑی ہیں جنہوں نے دو برس قبل رافل نڈال کو ومبلڈن میں حیران کن شکست برداشت کرنے پر مجبور کیا تھا۔ پہلے راؤنڈ میں کامیابی حاصل کرنے والے کھلاڑیوں میں ڈیوڈ فیرر کے علاوہ خاتون زمرے میں ومبلڈن رنراَپ ایجین بوچارڈ، اینا ایوانووچ، 2011ء کی چمپین سمنتا اسٹوسر اور سابق عالمی نمبر ایک وکٹوریہ ایزارنکا شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT