Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / کیرالا میں موسلادھار بارش کیساتھ مانسون کا آغاز

کیرالا میں موسلادھار بارش کیساتھ مانسون کا آغاز

ٹاملناڈو، کرناٹک اور دیگر علاقوں میں پیشرفت، رواں سال بہتر بارش کا امکان
تھرواننتاپورم ۔ 8 جون (سیاست ڈاٹ کام) جنوب مغربی مانسون تقریباً سات دن کی تاخیر کے بعد بالآخر آج کیرالا سے ٹکرا گیا جس کے ساتھ ہی ملک میں باضابطہ طور پر موسم برسات کا آغاز ہوگیا۔ اس جنوبی ریاست میں مانسون ٹکرانے کے پہلے ہی دن موسلادھار بارش کے نتیجہ میں ایک شخص فوت ہوگیا۔ ہندوستانی محکمہ موسمیات کے تھرواننتاپورم علاقائی مرکز کے سربراہ کے سنتوش نے کیا کہ ’’جنوب مغربی مانسون کیرالا اور لکشادیپ سے ٹکرا گیا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق اب یہ مانسون ٹاملناڈو کے کئی علاقوں کے علاوہ جنوبی داخلی کرناٹک کے کچھ حصوں اور خلیج بنگال کے بقیہ حصوں کی سمت پیشقدمی کررہا ہے۔ ذرائع نے کہا کہ کیرالا کے کئی حصوں میں کل رات سے موسلادھار بارش شروع ہوگئی۔ ضلع ایڈوکی میں مٹی کے تودے کھسکنے کے سبب ایک 36 سالہ شخص فوت ہوگیا۔

پولیس نے کہا کہ ایس ایف آئی کی ایڈوکی ڈسٹرکٹ یونٹ کا سابق صدر جربی جان وزہاوارہ میں مٹی کا تودا گرنے کے سبب فوت ہوگیا۔ اس کی ماں شدید زخمی ہوئی ہے۔ ہندوستانی محکمہ موسمیات نے کیرالا میں مانسون کی آمد کے بارے میں تین اہم خدوخال مقرر کئے تھے جن کی پہلی مرتبہ آج تکمیل ہوئی۔ محکمہ موسمیات نے ابتدائی پیش قیاسی میں کہا تھا کہ 7 جون کو مانسون ٹکرائے گا لیکن گذشتہ روز اس نے کہا تھا کہ 9 جون کو مانسون ٹکرا سکتا ہے۔ کیرالا سے مانسون ٹکرانے کی تاریخ یکم ؍ جون رہی ہے۔ گذشتہ دو سال میں کمزور مانسون کے بعد اس سال معمولی سے زائد بارش کی پیش قیاسی کی گئی ہے۔ 2015ء کے دوران شمال مغرب میں 14 فیصد مانسون کی کمی درج کی گئی ہے۔ وسطی ہند میں 17 فیصد اور جنوبی ہند میں 15 فیصد معمولی سے کم بارش ریکارڈ کی گئی تھی۔ 2014ء میں مجموعی طور پر معمول سے 12.3 فیصد کم بارش ہوئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT