کیری کی اسرائیلی وزیر خارجہ سے امن مساعی پر بات چیت

واشنگٹن ، 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے اپنے اسرائیلی ہم منصب اویگدور لائبرمن سے ملاقات کی اور متعدد مسائل پر تبادلہ خیال کیا، جن میں ایران اور اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان مذاکرات کی صورتحال شامل ہیں۔ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان جین ساکی نے کہا کہ انھوں نے امریکہ۔ اسرائیل رشتے کے مکمل نوعیت کے مسائل پر تبا

واشنگٹن ، 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے اپنے اسرائیلی ہم منصب اویگدور لائبرمن سے ملاقات کی اور متعدد مسائل پر تبادلہ خیال کیا، جن میں ایران اور اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان مذاکرات کی صورتحال شامل ہیں۔ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان جین ساکی نے کہا کہ انھوں نے امریکہ۔ اسرائیل رشتے کے مکمل نوعیت کے مسائل پر تبادلہ خیال کیا، جن میں اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان مذاکرات کی حالت شامل ہے

اور سکریٹری آف اسٹیٹ نے دونوں فریقوں کی جانب سے ایسے اقدامات کی اہمیت پر زور دیا جو امن کیلئے سازگار ماحول میں حصہ ادا کریں۔ ساکی نے اس میٹنگ کے بعد کہا کہ دونوں قائدین نے سکیورٹی اور علاقائی مسائل بشمول ایران اور شام کے بارے میں دونوں ملکوں کے درمیان گہری مشاورتوں کو بھی جاری رکھا ہے۔ یروشلم میں میٹنگ سے قبل کیری نے کہا کہ اسرائیل اور فلسطینی دونوں سخت محنت کر رہے ہیں کہ آگے بڑھا جاسکے۔ ’’اور دونوں فریقوں نے اشارہ دیا ہے کہ وہ آنے والی بات چیت میں کوئی مثبت پیش رفت چاہیں گے۔

ہم ظاہر ہے ایسی پیش رفت دیکھنا چاہتے ہیں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ یہ اُن کیلئے اور خطہ کیلئے اہم ہے‘‘۔ کیری نے کہا، ’’ہم ایران اور ایرانی نیوکلیر پروگرام کے چیلنج کے تعلق سے بات کریں گے۔ یہ بات چیت تو اس ہفتے بھی چلتی رہی ہے، لہذا ہمارے لئے قابل لحاظ وجہ ہے کہ اس مساعی کے ضمن میں کوشش کی جائے۔ نیز متعلقہ خطہ کو بھی ظاہر ہے کہ زبردست چیلنجوں کا سامنا ہے‘‘۔ انھوں نے کہا کہ شام بدستور بڑی انسانی تباہی ہے، اور اس کا گہرا اثر اسرائیل پر، اردن پر، لبنان پر، اور مجموعی طور پر سارے خطہ پر پڑتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT