Monday , November 20 2017
Home / دنیا / کیلیفورنیا کے دو جنگلوں میں تیزی سے بھڑکنے والی آگ

کیلیفورنیا کے دو جنگلوں میں تیزی سے بھڑکنے والی آگ

SAN ANDREAS, SEP 13 - A firefighter lights a backfire while battling the Butte fire near San Andreas, California September 12, 2015. The Butte fire has destroyed 86 homes and 51 outbuildings in rural Amador and Calaveras counties, where it covers an estimated 65,000 acres (26,305 hectares), officials said. REUTERS/UNI PHOTO-13R

262 مربع کلومیٹر کے رقبہ میں آگ بھڑک اُٹھنے سے درجہ حرارت تین گنا

ایجنجلس کیمپ ۔13ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہزاروں افراد کے ایک زبردست جنگل کی آگ سے گھبرا کر فرار ہونے لگے جو کیلیفورنیا کے خشک سیرانیواڈا پہاڑ کے دامن میں اور دوسری آگ شمالی کیلیفورنیا میں بھڑک اُٹھی اور بے قابو ہوگئی ۔ آگ بجھانے کے کوشش میں مصروف آتش فرو عملہ کے چار ارکان جھلس جانے کی وجہ سے ہسپتال منتقل کردیئے گئے ۔ کیلیفورنیا کے شمالی علاقہ لیک کاؤنٹی میں سانس فرانسیسکو کے شمال میں 160 کلومیٹر کے وسیع جنگل میں آگ بھڑک اٹھی اور بعدازاں مزید 39کلومیٹر تک چند گھنٹوں میں پھیل گئی ۔ کیلیفورنیا کے محکمہ جنگلات اور آتش فروش محکمہ نے کہا کہ 262 مربع کلومیٹر علاقہ میں آگ بھڑک اٹھی ہے اوریہاں کا درجہ حرارت تین گنا ہوچکا ہے ۔ یہ علاقہ کئی سال سے خشک سالی کا شکار تھا ۔ کثیف بادلوں نے ہیلی کاپٹر س اور طیاروں کو  پرواز کرنے سے باز رکھا ۔56کلومیٹر کے علاقہ سے عوام گھروں کا تخلیہ کرنے پر مجبور ہوگئے ۔ شدید جھلس جانے والے ارکان آتش فرو عملہ کو بذریعہ طیارہ ایک ہسپتال منتقل کیا گیا ۔ آگ کی وجہ سے تاحال 86مکان راکھ کے ڈھیر بن چکے ہیں ۔ 51عمارتوں کو جزوی نقصان پہنچا ہے اور مزید 6400عمارتیں خطرہ میں ہیں ۔ دھویں کی وجہ سے کیلیفورنیا کے شہریوں کا دم گھٹ رہا ہے اور آگ کی وجہ سے کیلیفورنیا کے گھانس کے میدان راکھ کا ڈھیر بن چکے ہیں ۔

جلی ہوئی کاروں اور جلے ہوئے گھروں کے ملبے سے کافی فاصلہ پر مقیم شہری محفوظ مقام کی تلاش میں فرار ہوچکے ہیں ۔ کیلیفورنیا کے گورنر جیڈی براؤن نے ہنگامی حالات کا اعلان کردیا ہے ۔ 3850 آتش فرو ارکان کو آگ بجھانے کی ذمہ داری سپرد کی گئی ہے ۔ آج لگنے کی وجوہات کے بارے میں تحقیقات جاری ہیں ۔ دریں اثناء نئے تخلیہ کے احکام جاری کردیئے گئے ہیں کیونکہ یہ اس ریاست میں بھڑک اٹھنے والی اب تک کی سب سے بڑی آگ ہے جس سے دیوقامت سیکویا درختوں کے جنگل کو بھی خطرہ پیدا ہوگیا ہے ۔ 31جولائی کو بجلی گرنے سے بھڑک اٹھنے والی آگ میں 201 مربع میل یعنی 521 مربع کلومیٹر کا علاقہ راکھ کا ڈھیر بن چکا ہے ۔ امریکی محکمہ جنگلات کے بموجب درختوں کو بچانے کی کوشش میں مصروف آتش فرو عملہ نے دیوقامت درختوں کے اطراف کے علاقہ کو آگ سے محفوظ کردیا ہے لیکن آگ کے شعلے اُن کی کوششوں کو ناکام بنانے پر تلے ہوئے ہیں ۔
بار بار بھڑک اُٹھنے والی آگ کی وجہ سے خطرہ میں کمی ہونا مشکل معلوم ہوتا ہے تاہم نگرانی سے قیمتی درختوں کی حفاظت میں بڑی حد تک کامیابی ہوئی ہے ۔ بعض درخت تین ہزار سال قدیم ہے اور 82میٹر سے زیادہ بلند ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT