Sunday , June 24 2018
Home / ہندوستان / کیمبرج اینالیٹیکا کے متعلق واقعات سے پوری دنیا میں کہرام 

کیمبرج اینالیٹیکا کے متعلق واقعات سے پوری دنیا میں کہرام 

20 کروڑ ہندوستانیوں کے ڈاٹا کے غلط استعمال پر حکومت کا انتباہ : روی شنکر پرساد
نئی دہلی۔21 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے سوشل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارم فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ کو آج متنبہ کیا ہے کہ ان کے پلیٹ فارم کا استعمال کرنے والے 20 کروڑ ہندوستانیوں کے ڈاٹا کی چوری یا اس کے غلط استعمال کی کسی بھی کوشش کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اور اگر ایسا ہوتا ہے تو حکومت انہیں ہندوستان طلب بھی کرے گی۔مرکزی وزیر برائے انفارمیشن ٹکنالوجی اور قانون روی شنکر پرساد نے پارلیمنٹ احاطہ میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ‘ مسٹر مارک زکربرگ آپ اچھی طرح سمجھ لیں کہ فیس بک کے سسٹم سے کوئی ڈاٹا چوری یا اس کا غلط استعمال کرنے کی کسی بھی کوشش کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ہمارے آئی ٹی قانون کے تحت سخت اختیارات حاصل ہیں جن میں آپ کو ہندوستان میں سمن کرنے کا اختیار بھی شامل ہے ‘۔مسٹر پرساد نے کہا کہ ڈاٹا مائننگ فرم میں کیمبرج انالیٹکا کے تعلق سے حالیہ دنوں میں پیش آنے والے واقعات سے پوری دنیا میں کہرام مچ گیا ہے کیونکہ یہ معاملہ قومی سلامتی اور انتخابی عمل میں غیرجانبداری کا ہے ۔ انہوں نے کانگریس پارٹی اور کیمبرج انالیٹکا کے تعلقات کے حوالہ سے آئی خبروں پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کانگریس نے اس کمپنی کی خدمات حاصل کی ہیں اور میڈیا رپورٹوں کے مطابق 2019 انتخابات میں کانگریس اس کمپنی کی خدمات حاصل کرنا چاہتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں آئی ٹی اور قانونی وزیر ہونے کے ناطے وہ واضح کردینا چاہتے ہیں کہ حکومت میڈیا کی آزادی، آزادی اظہار رائے اور سوشل میڈیا پر افکار و نظریات کو پیش کرنے کے حق کی پوری طرح حمایت کرتی ہے لیکن براہ راست یا بالوسطہ طور پر فیس بک سمیت دیگر سوشل میڈیا پر ہندوستان میں انتخابی عمل کو غیر پسندیدہ طریقے سے متاثر کرنے کی کسی بھی کوشش کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

 

TOPPOPULARRECENT