Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / کیمرون کی مسجد میں خودکش حملے، 12 مصلی جاں بحق

کیمرون کی مسجد میں خودکش حملے، 12 مصلی جاں بحق

بمبار بھی مصلیوں کی صف میں شامل ہوگیا تھا، بوکوحرام کے جہادیوں پر شبہ
یاؤنڈی ۔ 13 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کیمرون کی ایک مسجد پر خودکش بم دھماکے کے نتیجہ میں کم سے کم 12 مصلیان جاں بحق ہوگئے۔ ایک اعلیٰ سیکوریٹی عہدیدار نے مہلوکین کی ابتدائی تعداد کی توثیق کی ہے۔ نائجیریا میں دہشت گرد تنظیم بوکوحرام سے تعلق رکھنے والے اسلامی انتہاء پسند کیمرون کے اس علاقہ کو اکثر اپنے حملوں کا نشانہ بناتے رہے ہیں۔ سیکوریٹی ذرائع نے کہا کہ نائجیریا کی سرحد سے متصلہ کیمرون کے شمالی ضلع کولوفاتا میں کویاپے کی مسجد کو بوقت فجر خودکش بم حملے کا نشانہ بنایا گیا۔ خوفناک دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (داعش) سے ملحقہ بوکوحرام گذشتہ سال جولائی سے شمالی کیمرون کے ان علاقوں کو نشانہ بنارہی ہے۔ سیکوریٹی ذرائع نے کہا کہ 11 مصلیان مقام واقعہ پر ہی جاں بحق ہوگئے۔ 12 واں شخص ہسپتال میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکا۔ ذرائع نے کہا کہ خودکش بمبار بھی آج مقامی وقت کے مطابق صبح 5.30 بجے مصلیوں کی صف میں شامل ہوگیا اور خود کو دھماکہ سے اڑا لیا۔ قبل ازیں اس علاقہ میں کل رات کے ایک بم حملے میں دیگر دو افراد ہلاک ہوگئے۔ اس حملے کیلئے بھی بوکوحرام کو موردالزام ٹھہرایا جارہا ہے ۔ کیمرون نے اپنے علاقہ کو بوکوحرام کے جنگجوؤں کی جانب سے سرگرمیوں کا اڈہ خاتمہ کرنے اور اسلحہ جمع کرنے کی کوششوں کو روکنے کیلئے کئی سال سے جاری اقدامات میں ناکامی کے بعد علاقائی اتحاد کے ایک حصہ کے طور پر نائجیریا کی سرحد پر اپنے فوجی وجود میں اضافہ کیا ہے۔ نائجیریائی جہادیوں کو کمزور بنانے کے مقصد سے کیمرون کی فوج نے اپنے کئی سرحدی علاقوں پر بڑے پیمانے پر کارروائی بھی کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT