Friday , July 20 2018
Home / Top Stories / ’ کیمیائی حملے کوئی انسانی نہیں بلکہ آدم خور کے جرائم ‘

’ کیمیائی حملے کوئی انسانی نہیں بلکہ آدم خور کے جرائم ‘

بشار الاسد کے خلاف امریکہ اور اتحادیوں کا دباؤ جاری رہے گا : ڈونالڈ ٹرمپ
واشنگٹن ۔ 14 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے شام میں مبینہ کیمیائی حملوں کو ’ ایک آدم خور کے جرائم ‘ قرار دیا اور صدر بشاالاسد کو سزا دینے کے لیے برطانیہ اور فرانس کے ساتھ اس جنگ زدہ ملک پر مشترکہ فضائی حملوں کا آغاز کیا ۔ امریکی صدر نے دعویٰ کیا کہ مشترکہ کارروائی کا مقصد کیمیائی اسلحہ کی پیداوار ، پھیلاؤ اور استعمال کو روکنے کے موثر اقدام کے طور پر مشترکہ کارروائی کی گئی ہے ۔ ٹرمپ نے کہا کہ انہوں نے شام کے خلاف منخب و محدود حملوں کا حکم دیا ہے جہاں گذشتہ ہفتہ دوما میں کیمیائی گیس حملوں میں دجنوں افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔ ٹرمپ نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’ یہ ( کیمیائی حملے ) کسی انسان کی کارروائی نہیں تھی بلکہ ایک آدم خور کے جرائم تھے ‘ ۔ بشار الاسد حکومت کی طرف سے کیمیائی اسلحہ کا استعمال معطل کئے جانے تک امریکی دباؤ جاری رکھا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ’ برطانیہ ، فرانس اور امریکہ نے بہیمانہ اور بربریت انگیز حکومت کے خلاف اپنی طاقت کا کماحقہ استعمال کیا ہے ‘ ۔ امریکی صدر نے کہا کہ ’ انتہائی خوفناک اور بے رحم شامی حکومت کی طرف سے کیمیائی اسلحہ کے استعمال سے شامی شہریوں کے قتل عام میں ہولناک اضافہ ہوا ہے ‘ ۔ ٹرمپ نے کہا کہ ’ بدی پر مبنی حملے نے کئی کمسن بچوں اور ان کے ماں باپ کو درد ، رنج و غم میں مبتلا کردیا اور وہ محض سانس لینے کے لیے ہوا کے لیے ترستے رہ گئے تھے ۔ یہ کسی انسان کی کارروائی نہیں تھی بلکہ آدم خور کے جرائم تھے‘۔

ٹرمپ کے اٹارنی مائیکل کیخلاف فوجداری تحقیقات جاری
نیویارک،14 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے اٹارنی مائیکل کوہن کے خلاف کئی ماہ سے فوجداری تحقیقات کی جا رہی ہے ۔ استغاثہ کے وکیل نے مین ہیٹن کی ایک عدالت کو اس کی اطلاع دی۔ استغاثہ کے وکیل نے کل عدالت سے کہا کہ کوہن کے اپنے کاروباری لین دین کی تحقیقات کی جا رہی ہے کہ اٹارنی کے طور پر ان کے کام کاج کی جانچ ہو رہی ہے ۔ یہ معلومات اس وقت سامنے آئی جب کوہن نے استغاثہ کو ان کے گھر اور دفتر کی تلاشی میں برآمد کئے گئے دستاویزات دیکھنے سے روکنے کی کوشش کی تھی۔ اس حملہ کا اعلان کرتے ہوئے امریکی صدر ٹرمپ نے کہا: ’’ہم یہ جوابی کارروائی اس وقت تک جاری رکھنے کے لیے تیار ہیں جب تک شامی حکومت ممنوعہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال نہیں روکتی۔‘‘ امریکی وزیرِ دفاع جیمز میٹس نے واشنگٹن میں میڈیا کو بتایا کہ فی ا لحال یہ ایک ’ون ٹائم ہٹ‘تھی۔ روس نے امریکہ کو متنبہ کیا ہے کہ امریکہ کو کسی نا کسی قسم کے ردعمل کا سامنا کرنا پڑے گا۔

TOPPOPULARRECENT