Tuesday , September 25 2018
Home / Top Stories / کیمیائی ہتھیاروں کے دوبارہ استعمال پر حملہ کا انتباہ : امریکہ

کیمیائی ہتھیاروں کے دوبارہ استعمال پر حملہ کا انتباہ : امریکہ

اقوام متحدہ کی صبر و تحمل کی اپیل ‘ امریکہ پر جوابی پابندیاںروس کے زیر غور، تیسری عالمی جنگ کا خطرہ
واشنگٹن ۔15اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے شامی حکومت کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر شام نے اپنے شہریوں پر مزید کیمیائی حملے کیے تو امریکہ اس پر دوبارہ حملہ کرنے کے لیے ‘پوری طرح تیار ہے’۔امریکی صدر کی یہ تنبیہ امریکہ اور اس کے دو اور اتحادیوں کے اس حملے کے بعد آئی ہے جب انھوں شامی حکومت کی جانب سے گذشتہ ہفتے دوما میں کیے جانے والے مبینہ کیمیائی حملے کے جواب میں گذشتہ روز شام کے تین مقامات پر میزائلوں سے حملہ کیا۔ شام نے مسلسل کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے الزام کی تردید کی ہے۔اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں شام کے مرکزی اتحادی ملک روس نے امریکی حملے کی مذمت کے لیے قرار داد پیش کی لیکن وہ مسترد کر دی گئی۔حملوں کے بعد سلامتی کونسل کے ہنگامی اجلاس میں گرم ماحول دیکھنے میں آیا جب روس نے مغربی ممالک کی جانب سے کیے گئے حملوں کی مذمت کرنے کے لیے قرارداد پیش کرنے کی کوشش کی۔اقوام متحدہ میں روس کے سفیر وسیلی نبینزیا نے روس کے صدر ولادمیر پوٹن کاپیغام پڑھا جس میں انھوں نے اتحادی ممالک پر الزام لگایا کہ انھوں نے کیمیائی ہتھیاروں کا معائنہ کرنے والی ٹیم کی دوما میں ہونے والے واقعے کی تفتیش مکمل ہونے سے پہلے ہی شام پر حملہ کر دیا۔

اقوام متحدہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل ا ینٹونیو گوٹریس نے تمام ممالک سے شام کے معاملہ پر تحمل برتنے کی اپیل کی ہے ۔مسٹر گوٹریس نے کہا”ان خطرناک حالات میں تحمل برتیں اور کسی بھی ایسے کام سے بچیں جس سے یہ معاملہ مزید بڑھ جائے اور شامی عوام کی تکلیفوں میں اضافہ ہو”۔انہوں نے کہا بین الاقوامی مشاہد شام کے دوما میں ہوئے مشتبہ کیمیائی حملہ کے مقام کا دورہ کرنے کے لئے تیار ہیں جس کی وجہ سے امریکہ، فرانس اور برطانیہ نے فوجی کارروائی کی ہے ۔ماسکو سے موصولہ اطلاع کے بموجب روس نے امریکہ کے ساتھ حالیہ کشیدگی کے باعث ایٹمی اور طیارہ ساز صنعت میں تعاون روکنے کی دھمکی دی۔ اس سے اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ تیسری عالمی جنگ کا خطرہ بڑھے گا۔ تفصیلات کے مطابق روسی ارکان پارلیمان نے واشنگٹن کی روس پر پابندیوں کی قراردادوں کے جواب میں امریکہ سے درآمدات و برآمدات پر وسیع پیمانے کی پابندیاں لگانے والے ایک مسودہ قانون کو پارلیمان کی زیریں شاخ دوما میں بحث کے لئے پیش کردیا۔ ذرائع کے مطابق یہ مسودہ قانون امریکہ کے ساتھ نیو کلیئر، طیارہ سازی، راکٹ انجن سازی کے شعبہ جات میں باہمی تعاون کو روک دیے جانے کی تجویز پر مبنی ہے۔ جی سی سی ممالک نے شامی کیمیائی اسلحہ کی تنصیبات پر امریکہ، برطانیہ اور فرانس کے حملے کی حمایت کردی۔ یہ حملہ بین الاقوامی سطح پر ممنوعہ کیمیائی اسلحہ غوطہ کے نہتے باشندو ںکے خلاف استعمال کرنے پر کیا گیا۔ جی سی سی کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر عبداللطیف الزیانی نے واضح کیا کہ شامی کیمیائی اسلحہ کی تنصیبات پر سہ ملکی حملہ شامی نظام کیلئے کھلا پیغا م ہے کہ عالمی برادری شامی شہریوں پر کیمیائی اسلحہ کے استعمال پر خاموش نہیں رہے گی ۔

TOPPOPULARRECENT