Saturday , November 25 2017
Home / پاکستان / کینسر کے باوجود کلثوم نواز لاہور سے انتخابی مقابلہ کرینگی

کینسر کے باوجود کلثوم نواز لاہور سے انتخابی مقابلہ کرینگی

مریم نواز والدہ کی مہم چلائیں گی ، نواز شریف کی اہلیہ کو وزیراعظم بنانے کی تیاریاں
لاہور ۔ 23 اگست (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے معزول وزیراعظم نواز شریف کی شریک حیات کلثوم نواز جو حلق کے کینسر کے علاج کیلئے لندن میں مقیم ہیں، اپنی علالت کے باوجود 17 ستمبر کو ہونے والے ضمنی انتخاب میں حلقہ لاہور سے مقابلہ کریں گی۔ نواز شریف کے پولیٹیکل سکریٹری سنیٹر ڈاکٹر آصف کرمانی نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ’’قومی اسمبلی کے حلقہ 120 سے بیگم کلثوم کی مقابلے سے دستبرداری کے ضمن میں ہنوز تجویز زیرغور نہیں آئی۔ وہ انتخابی مقابلہ کریں گی اور پارٹی کے کارکنان ان کی مہم چلائیں گے‘‘۔ کرمانی نے کہا کہ وہ (کلثوم) کینسر کے عارضہ کے سبب انتخابی مہم میں حصہ نہیں لیں گی لیکن وہ یقینا مقابلہ کریں گی اور کامیاب ہوں گی۔ 60 سال سے زائد عمر کی بیگم کلثوم نواز کو مستقبل کی وزیراعظم تصور کیا جارہا ہے جو 17 ستمبر کے ضمنی انتخاب میں کامیابی کے بعد شاہد خاقان عباسی کی جگہ لیں گی۔ واضح رہیکہ پناما دستاویزات کے مقدمہ میں سپریم کورٹ نے 28 جولائی کو نواز شریف کو کسی بھی عوامی عہدہ کیلئے نااہل قرار دیا تھا جس کے بعد وہ لاہور کی نشست سے مستعفی ہوگئے تھے۔ اس مخلوعہ نشست کو پُر کرنے کیلئے ضمنی انتخاب منعقد کیا جارہا ہے۔ نواز شریف کی پاکستان مسلم لیگ (ن) نے بیگم کلثوم کی مہم چلانے کیلئے وزیرکامرس پرویز ملک کو باضابطہ طور پر نامزد کیا ہے۔ علاوہ ازیں مریم نواز بھی اپنی والدہ کی مہم کی نگراں ہوں گی اور ان کی کامیابی کو یقینی بنائیں گی۔ واضح رہیکہ ماضی میں فوجی ڈکٹیٹر پرویز مشرف کے دوران میں شریف خاندان کے تمام مرد جیل میں قید تھے اور ان کی پارٹی کے سرکردہ قائدین روپوش اور غیرسرگرم ہوگئے تھے۔ بیگم کلثوم نواز نے پی ایم ایل (ن) کی صدر کی حیثیت سے تن تنہا مہم چلاتے ہوئے اپنی پارٹی کے کارکنوں اور عوام کو متحرک کی تھیں جس کے نتیجہ میں فوجی حکومت ان (کلثوم) کے ارکان خاندان کو رہا کرنے پر مجبور ہوگئی تھی

TOPPOPULARRECENT