Saturday , September 22 2018
Home / دنیا / کینیڈین قونصل جنرل کا بیٹا قتل کے الزام میں گرفتار

کینیڈین قونصل جنرل کا بیٹا قتل کے الزام میں گرفتار

میامی 16 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) میامی میں متعین کینیڈین قونصل جنرل کے 15 سالہ بیٹے کو منشیات کے مشتبہ تاجرین کے ساتھ شوٹ آؤٹ کے تبادلہ میں خود اپنے ہی 17 سالہ بھائی کے قتل کا مرتکب قرار دیا گیا ہے۔ میامی ۔ ڈیڈ کاؤنٹی کی ایک گرانڈ جیوری نے مارک وبافیپازو کو قتل کا مجرم قرار دیا ہے۔ اُسے بچوں کی جیل سے بالغوں کی جیل منتقل کیا جائے گا جہاں

میامی 16 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) میامی میں متعین کینیڈین قونصل جنرل کے 15 سالہ بیٹے کو منشیات کے مشتبہ تاجرین کے ساتھ شوٹ آؤٹ کے تبادلہ میں خود اپنے ہی 17 سالہ بھائی کے قتل کا مرتکب قرار دیا گیا ہے۔ میامی ۔ ڈیڈ کاؤنٹی کی ایک گرانڈ جیوری نے مارک وبافیپازو کو قتل کا مجرم قرار دیا ہے۔ اُسے بچوں کی جیل سے بالغوں کی جیل منتقل کیا جائے گا جہاں پر اُس پر مقدمہ چلایا جائے گا۔ ذرائع نے بتایا کہ وبافیبازو کی والدہ راکسین ڈوبے ایک سفارت کار ہیں اور اُس پر بالغ ملزمین کی طرح مقدمہ چلایا جائے گا۔ اس کے اٹارنی کرٹ اوبرونٹ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ ہم اُس کے قصوروار نہ ہونے کی درخواست داخل کررہے ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ دونوں بھائی اپنی والدہ کی کار چلارہے تھے جس کی نمبر پلیٹ سفارتی طرز کی تھی۔ دونوں بھائیوں نے میامی کے ایک مکان سے ایک کیلو گانجہ سرقہ کرنے کا منصوبہ بنایا تھا لیکن وہ کامیاب نہ ہوسکے کیونکہ منشیات کے تاجرین کو اُن کے منصوبہ کا پتہ چل گیا تھا اور فائرنگ کا تبادلہ شروع ہوگیا جس میں فیبازو کا بڑا بھائی اور ایک مشتبہ تاجر ہلاک ہوگئے جبکہ دو دیگر زخمی ہونے والے افراد کے خلاف بھی قتل کا مقدمہ دائر کیا گیا ہے۔ ڈوبے ایک تجربہ کار اور سینئر سفارت کار ہیں۔ اُنھیں گزشتہ سال میامی میں کینیڈا کے قونصل جنرل کی حیثیت سے متعین کیا گیا تھا اور جاریہ سال فروری میں اُن کے دونوں بیٹے بھی اپنی والدہ کے ساتھ رہنے میامی آگئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT