Sunday , April 22 2018
Home / جرائم و حادثات / کیپٹن کلیم پر قاتلانہ حملہ میں ملوث ، 5 ملزمین گرفتار

کیپٹن کلیم پر قاتلانہ حملہ میں ملوث ، 5 ملزمین گرفتار

اراضی تنازعہ اصل وجہ ، تین ماہ قبل سازش رچی گئی ، ڈی سی پی ویسٹ زون
حیدرآباد 22 جنوری (سیاست نیوز) ہمایوں نگر پولیس نے کیپٹن اکرام علی کلیم پر قاتلانہ حملہ میں ملوث پانچ حملہ آوروں کو گرفتار کرلیا اور اُن کے قبضہ سے حملہ میں استعمال کئے گئے ہتھیار ضبط کرلئے۔ پولیس کی تحقیقات میں یہ معلوم ہوا ہے کہ شہر کے پاش علاقے بنجارہ ہلز میں اراضی تنازعہ کے نتیجہ میں یہ حملہ کیا گیا تھا۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ویسٹ زون مسٹر اے وینکٹیشور راؤ نے ملزمین کو میڈیا کے روبرو پیش کرتے ہوئے اِس حملہ سے متعلق تفصیلات بتاتے ہوئے کہاکہ کیپٹن کلیم کا قتل کرنے کے لئے تین ماہ قبل سازش رچی گئی تھی اور بارکس کے ساکن سعود عمودی نے کیپٹن کا قتل کرنے کے لئے کرایہ کے قاتلوں کو سپاری دی تھی۔ اُنھوں نے کہاکہ روڈ نمبر 10 پر واقع 2 ہزار مربع گز اراضی جس کے مالک کیپٹن کلیم ہیں، اس اراضی سے متصل ایک ہوٹل ’دعوت حیدرآباد‘ بھی واقع ہے اور اس ہوٹل کو اِس کیس کے کلیدی ملزم سعود عمودی چلارہا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ سعود عمودی نے عابد زیدی سے مذکورہ ہوٹل حاصل کی اور کیپٹن کلیم کی اراضی کو بھی ہڑپنے کا منصوبہ رکھتا تھا۔ اس اراضی سے متعلق دونوں کے درمیان تنازعہ چل رہا تھا جس کے نتیجہ میں سعود عمودی نے اپنے ساتھی حسین محمد فاروق کی مدد سے کیپٹن کلیم کا قتل کرنے کے لئے ایک خطرناک مجرم اعجاز احمد عرف فروٹ اعجاز سے ربط کیا اور قتل کے لئے 50 لاکھ روپئے کی پیشکش کی اور 15 لاکھ روپئے حوالے کئے۔ فروٹ اعجاز نے اس کنٹراکٹ کیلئے حملہ آوروں کوبطور پیشگی ایک لاکھ 50 ہزار روپئے حوالے کئے۔ نومبر سے ہی کیپٹن کلیم کو قتل کرنے کا منصوبہ چل رہا تھا جس کے تحت آرام گڑھ علاقہ میں ایک میٹنگ رکھی گئی تھی جس میں کلیم کو قتل کرنے اور ہتھیار حاصل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ فروٹ اعجاز نے اپنے بیٹے عدنان احمد کی مدد سے جوبلی ہلز کے روڈی شیٹر محمد حاجی الدین عرف حاجی کو قتل کیلئے سپاری دی لیکن بعض وجوہات سے حاجی اِس تعلق سے محتاط ہوگیا تھا جس کے نتیجہ میں ایک اور روڈی شیٹر محمد عباس عرف شکارا عباس سے رابطہ پیدا کیا گیا اور شیخ وحید عرف فروٹ وحید نے کرایہ کے قاتلوں کو اکٹھا کیا۔ منصوبہ کے تحت 10 جنوری کو کیپٹن کلین کو اُن کے الیگینس اپارٹمنٹ پر اُس وقت مہلک ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا جب وہ نمائش سے اپنے افراد خاندان کے ہمراہ اپارٹمنٹ واپس ہوئے تھے۔ مسٹر وینکٹیشور راؤ نے بتایا کہ اِس حملہ میں کلیم بچ نکلے لیکن پولیس نے اِس کیس کی تفصیلی تحقیقات میں اہم پیشرفت کرتے ہوئے ملزمین کی نقل و حرکت اور سی سی ٹی وی ریکارڈنگ کے ذریعہ حاصل کرلیا۔ انھوں نے کہاکہ خواجہ منشن شادی خانے کے قریب سعود عمودی، فروٹ اعجاز نے کرایہ کے قاتلوں کو ہتھیار حوالے کئے اور بعدازاں حملہ آوروں نے کیپٹن کلیم پر قاتلانہ حملہ کیا۔ اس سازش کی سی سی ٹی وی ریکارڈنگ حاصل کرلی گئی ہے جسے عدالت میں اہم شواہد کے طور پر استعمال کیا جائے گا۔ پولیس نے 5 حملہ آوروں محمد عباس روڈی شیٹر، محمد عمران، محمد صدام، شیخ وحید اور محمد حاجی الدین روڈی شیٹر کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ سعود عمودی، اعجاز احمد، حسین محمد فاروق، عدنان احمد، مکرم خان اور ڈرائیور وسیم ہنوز فرار ہیں اور اُنھیں گرفتار کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ سعود عمودی اور اُس کے ساتھی بنجارہ ہلز پولیس اسٹیشن حدود میں کئی وارداتوں میں ملوث ہیں اور اُن کی روڈی شیٹ کھولی جائے گی۔ بعدازاں اُن پر پی ڈی ایکٹ بھی نافذ کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT