Wednesday , June 20 2018
Home / اضلاع کی خبریں / کی حکومت بنے گی: کھرگےIII مرکز میں یو پی اے

کی حکومت بنے گی: کھرگےIII مرکز میں یو پی اے

گلبرگہ ۔/18اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)مرکزی وزیر ملیکارجن کھرگے اور گلبرگہ حلقہ لوک سبھا کے کانگریس کے امیدوار مسٹر ملیکارجن کھرگے نے آج کہا ہے کہ ان کے حلقہ انتخاب میں عوام کا جوش و خروش اور ان کی آرا جاننے کے بعد انھیں اس بات کی توقع ہے کہ انھیں بھاری اکثریت سے کامیابی ملے گی اور مرکز میں پھر ایک مرتبہ یو پی اے کی حکومت تیسری معیاد ک

گلبرگہ ۔/18اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)مرکزی وزیر ملیکارجن کھرگے اور گلبرگہ حلقہ لوک سبھا کے کانگریس کے امیدوار مسٹر ملیکارجن کھرگے نے آج کہا ہے کہ ان کے حلقہ انتخاب میں عوام کا جوش و خروش اور ان کی آرا جاننے کے بعد انھیں اس بات کی توقع ہے کہ انھیں بھاری اکثریت سے کامیابی ملے گی اور مرکز میں پھر ایک مرتبہ یو پی اے کی حکومت تیسری معیاد کے لیے قام ہو جائے گی۔جیسا کہ انڈیا شائننگ کے بی جے پی کے نعرے کے باوجود بھی کانگریس نے گذشتہ الیکشن میں بھاری اکثریت سے کامیابی حاسل کی تھی اور مرکز میں یو پی اے IIکی حکومت قائم کی تھی۔انھوں نے کہا کہ یو پی اے II نے جس طرح ملک کو ترقی کی راہ پر ڈالا ہے اورعوام کی فلاح و بہبود کے لیے جو اسکیمیں چلائی ہیں عوام کے سامنے وہ سب ترقیاتی کام ہیں اور عوام انھیں مستحسن نظروں سے دیکھتے ہیں۔انھوں نے توقع ظاہر کی ہے کہ میں نے اپنے حلقہ انتخاب سے گذشتہ پچاس سالوں سے عوام کی خدمت ک ہے اور میرا کام عوام مکے سامنے ہے اورمجھے اس بار پبھی پورا یقین ہے کہ عوام مجھے اپنے حق میں ووٹ دیں گے۔انھوں نے کہا کہ انتخابی ایجنٹ اور اس کے دستخط کے بارے میں انتخابی عملہ اور ریو نائک بیملگی کے ساتھ ہوئے تنازع سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔انھوں نے کہا کہ اس معاملے سے میں اتنا ہی دور ہوں جتنا کہ بی جے پی مجھ سے دور ہے۔ایک سوال کے بارے میں انھوں امید ظاہ رکی ہے کہ ریاست کرناٹک میں کانگریس کم از کم 20نشستیں ضرور حاصل کرے گی اور اپنا کھویا ہوا وقار دوبارہ حاصل کرے گی۔انھوں نے کہا کہ آندھرا پردیش میں تلنگانہ کی تشکیل کافائدہ کانگریس کو ملے گا اور مہاراشٹرا میں بھی کانگریس کے حق میں عوام کی آرا ہے ۔انھوں نے دعویٰ کیا کہ عوام یو پی اے کی ترق کے ساتھ ہیں اور مخالفین کے جھوتے پروپیگنڈوں کو انھوں نے مسترد کیا ہے اور آئندہ بھی کریں گے۔مسٹر کھرگے اور ان کی اہلیہ رادھا دیوی نے بھی اپنے حق رائے دہی سے استعفادہ کیا۔اس موقع پر سلیم بیگ ،کرشنا جی کلکرنی ،راول اپارے اور دیگر سمیت موجود ہیں۔

TOPPOPULARRECENT