Sunday , August 19 2018
Home / سیاسیات / کے سی آر ، تیسرے محاذ کے لیے پالیسی سازی میں مصروف

کے سی آر ، تیسرے محاذ کے لیے پالیسی سازی میں مصروف

ملک کی ہمہ مقصدی ترقی کے لیے موجودہ پالیسیوں میں ضروری تبدیلیوں پر غور ، تجاویز طلب
نئی دہلی ۔ 10 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام ) : قومی سیاست میں قدم رکھنے کے عزم کو مضبوط بناتے ہوئے چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے تیسرے محاذ کے لیے پالیسیاں تیار کرنے کا عمل شروع کردیا ہے ۔ این ڈی اور کانگریس کے خلاف ایک مضبوط تیسرا محاذ بنانے کی عین آرزو کو پورا کرنے کے لیے انہوں نے مسودہ روڈ میاپ کو تیار کرنے کے لیے خود کو مصروف رکھا ہے ۔ ملک میں سماج کے تمام طبقات کے مفادات کو ملحوظ رکھتے ہوئے ایک ترقیاتی ایجنڈہ وضع کرنے کا احساس ظاہر کرتے ہوئے چیف منسٹر نے اپنے منصوبوں کا اظہار کیا ہے ان کا کہنا ہے کہ اب وقت آگیا ہے کہ موجودہ پالیسیوں میں پائی جانے والی خامیوں کو دور کرتے ہوئے نئی پالیسیاں بنائی جائیں اور خواتین کو بھی قابل عمل بنایا جائے ۔ چیف منسٹر نے قومی سطح پر ترقیاتی ایجنڈہ کو قطعیت دینے سے قبل مختلف شعبہ ہائے حیات سے تعلق رکھنے والی ممتاز شخصیتوں سے اپنی سرکاری رہائش گاہ پرگتی بھون پر ملاقات کی اور ان سے پالیسیوں کی تیاری میں تعاون کی خواہش کی ۔ انہوں نے اس خصوص میں ان ممتاز دانشوروں اور شخصیتوں سے ان کے رائے کے ساتھ ساتھ تجاویز بھی طلب کی ہیں ۔ وہ چاہتے ہیں کہ قانون سازی اور پالیسیاں بنانے کے عمل میں یہ شخصیتیں ان کی مدد کریں تاکہ پالیسیوں کو زیادہ سے زیادہ کار آمد بناکر تمام ریاستوں کے عوام کے مختلف طبقات کی ضروریات کو پورا کیا جاسکے ۔ انہوں نے اظہار افسوس کیا کہ ہندوستان تقریبا 70 سال قبل آزاد ہوا لیکن آج بھی عوام کو پینے کے پانی کے حصول میں مشکلات ہورہی ہیں ۔ ایک ایسے وقت جب کہ دنیا کے دیگر ممالک کے ترقی کے میدان میں آگے ہورہے ہیں ہمارا ملک بنیادی ضرورتوں کی تکمیل سے بھی قاصر ہے ۔ عوام کو پینے کا صاف محفوظ پانی بھی نصیب نہیں ہے ۔ ملک کے کئی حصوں میں کسانوں کے لیے آبپاشی سہولتیں نہیں ہیں اور عوام کی بڑی تعداد کو برقی سربراہی کی سہولت دستیاب نہیں ہے ۔ ریاستوں کے درمیان آبی تنازعات حل طلب ہیں ۔ سب سے اہم نکتہ یہ ہے کہ ملک میں وفاقی جذبہ مفقود ہے ۔ آج ملک کے عوام جن حالات سے گذر رہے ہیں انہیں اس کیفیت سے باہر نکالنے کے لیے ضروری ہے کہ موجوہ پالیسیوں کو از سر نو ترتیب دیا جائے اور ملک کی ہمہ جہتی ترقی کے لیے پالیسیوں میں ضروری تبدیلیاں لائی جائیں ۔ تلنگانہ ریاست کے عوام کی بہبود کو یقینی بنانے میں تیز تر اقدامات کیے ہیں ۔ ہم نے ترقی اور انفراسٹرکچر کو فروغ دینے کے لیے یقینی طور پر کام کیا ہے تاکہ عوام کو ایک شاندار زندگی گذارنے میں مدد مل سکے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ مرکز نے تلنگانہ میں روبہ عمل لائی جارہی بعض اسکیمات کو موثر پایا ہے لہذا تلنگانہ کی ترقی کے خطوط پر ملک کے دیگر علاقوں کی ترقی کو یقینی بنانے کی غرض سے ہی انہوں نے تیسرے محاذ کا منصوبہ بنایا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT