Wednesday , December 12 2018

کے سی آر تلنگانہ میں سیاسی نظام کی تبدیلی کے خواہاں

حیدرآباد۔/13مئی، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ ریاست تلنگانہ میں سیاسی نظام کو تبدیل کرنے کی کوشش میں نظر آرہے ہیں۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ تمام سیاسی جماعتوں کو اپنی پالیسی کی راہ پر گامزن کرنا چاہتے ہیں۔ 16مئی سے شروع ہونے والے سوچھ حیدرآباد پروگرام کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے

حیدرآباد۔/13مئی، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ ریاست تلنگانہ میں سیاسی نظام کو تبدیل کرنے کی کوشش میں نظر آرہے ہیں۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ تمام سیاسی جماعتوں کو اپنی پالیسی کی راہ پر گامزن کرنا چاہتے ہیں۔ 16مئی سے شروع ہونے والے سوچھ حیدرآباد پروگرام کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے اس پروگرام کا آغاز مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے مجوزہ انتخابات کے پیش نظر کیا ہے اور اس پروگرام کے ذریعہ وہ ٹی آر ایس کارکنوں میں قائدانہ صلاحیتوں کے ساتھ ساتھ عوامی خدمت کے جذبات کا جائزہ لینا چاہتے ہیں۔ واضح رہے کہ ٹی آر ایس کی رکنیت سازی مہم کے دوران مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے نیا طرز طریقہ کار اختیار کرتے ہوئے عوام کو پارٹی کی رکنیت حاصل کرنے کیلئے راغب کیا جس کے زبردست نتائج برآمد ہوئے اور جن علاقوں سے ٹی آر ایس کو رکنیت سازی کی توقع نہیں تھی ان علاقوں کے عوام بھی ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرنے لگے۔ جوق درجوق عوامی رکنیت سازی کو دیکھتے ہوئے دیگر سیاسی جماعتوں نے ٹی آر ایس کی حکمت عملی کو اختیار کرتے ہوئے یہ بات بالواسطہ طور پر ہی سہی تسلیم کرلی کہ ٹی آر ایس نے رکنیت سازی مہم میں دیگر سیاسی جماعتوں کو مات دے دی ہے۔ اسی طرح ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سوچھ حیدرآباد پروگرام کے تحت حیدرآباد میں نہ صرف عوامی مسائل کو حل کرنے کا منصوبہ تیار کررہے ہیں بلکہ جن 400 ٹیموں کی تشکیل کا اعلان کیا گیا ہے ان میں سے قائدین کا انتخاب عمل میں لایا جائے گا

اور ان قائدین و کارکنوں میں سے جو محنتی اور عوامی خدمت کے جذبہ سے سرشار نظر آئیں گے انہیں پارٹی کی جانب سے نامزد عہدوں پر تقرر کیا جائے گا۔ علاوہ ازیں ٹی آر ایس ذرائع کے بموجب ان 400ٹیموں میں موجود کارکنوں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے بعد مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے انتخابات میں ٹکٹس کی تقسیم کے متعلق ان سرگرمیوں کو اہمیت دیئے جانے کا منصوبہ ہے۔ تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی منفرد انداز میں کی جانے والی تشہیر کے علاوہ علحدہ طرز کے اقدامات کی وجہ سے ٹی آر ایس کو عوامی تائید حاصل ہورہی ہے لیکن بعض اقدامات کے باعث حکومت کو عوامی ہزیمت کا سامنا بھی کرنا پڑ رہا ہے لیکن بتایا جاتا ہے کہ 16مئی سے شروع ہورہے سوچھ حیدرآباد پروگرام کے دوران ٹی آر ایس نہ صرف سرکاری عہدیداروں بلکہ پارٹی کارکنوں کو بھی سڑکوں کی صفائی کے علاوہ مسائل کے حل میں حصہ لینے کی ترغیب دیتے ہوئے عوام کے درمیان پہنچانے کا منصوبہ تیار کئے ہوئے ہے۔

TOPPOPULARRECENT