Thursday , December 13 2018

کے سی آر حکومت مسلم تحفظات پر عمل آوری میں ناکام

ویلفیر پارٹی آف انڈیا حکومت پر دباؤ بنائے گی۔ قومی صدر قاسم رسول الیاس کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔12۔ فروری (سیاست نیوز) ویلفیر پارٹی آف انڈیا نے مرکزی اور ریاستی حکومتوں پر عوام سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل میں ناکامی کا الزام عائد کیا۔ پارٹی کے قومی صدر قاسم رسول الیاس نے آج حیدرآباد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے حکومت پر مخالف عوام پالیسیوں کو اختیار کرنے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ وزیراعظم اچھے دن کا وعدہ کر رہے ہیں لیکن 4 برسوں میں اچھے دنوں کے کوئی آثار دکھائی نہیں دیتے۔ سماج کا ہر طبقہ حکومت کی پالیسیوں سے پریشان ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام آدمی موجودہ حکومت میں بنیادی سہولتوں سے محروم ہوچکا ہے اور نت نئی پالیسیوں کے ذریعہ عوام پر بوجھ عائد کیا جارہا ہے ۔ قاسم رسول الیاس نے تلنگانہ کی ٹی آر ایس حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن 4 برسوں میں اس سلسلہ میں کوئی ٹھوس پیشرفت نہیں کی گئی ۔ اسمبلی میں بل منظور کرتے ہوئے مرکز کو بھیج دیا گیا اور مرکز سے تحفظات کی منظوری کی توقع کرنا فضول ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ٹی آر ایس حکومت مسلم تحفظات کی فراہمی میں سنجیدہ ہوتی تو مرکز کے پاس بل روانہ کرنے کے بجائے عمل آوری کے دوسرے طریقے اختیار کئے جاتے۔ انہوں نے کہا کہ ویلفیر پارٹی مسلم تحفظات پر عمل آوری کیلئے حکومت پر دباؤ برقرار رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ کے سی آر نے ٹاملناڈو کی طرز پر مسلمانوں کو تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ اور اس وعدہ کی تکمیل سے روزگار اور تعلیم میں مسلمانوں کی پسماندگی دور ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کو ویلفیر اسٹیٹ میں تبدیل کرنے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن سماج کا ہر طبقہ مسائل کا شکار ہے اور حکومت وعدوں کی تکمیل میں نا کام ہوچکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں اور اراضیات کے تحفظ کے لئے ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے۔ قاسم رسول الیاس نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وعدوں کی تکمیل کے سلسلہ میں وائیٹ پیپر جاری کرے۔ ایک سوال کے جواب میں قاسم رسول الیاس نے کہا کہ ویلفیر پارٹی آئندہ عام انتخابات میں حصہ لے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ویلفیر پارٹی عہدوں کے حصول کے بجائے موجودہ سیاسی نظام میں تبدیلیوں کا منصوبہ رکھتی ہے۔ موجودہ سیاسی نظام بے قاعدگیوں اور کرپشن سے آلودہ ہوچکا ہے ۔ ویلفیر پارٹی آف انڈیا کے قومی صدر نے تلنگانہ میں اقلیتی طلبہ کی اسکالرشپ اور فیس بازادائیگی میں تاخیر پر نکتہ چینی ہے۔ انہوں نے حکومت کی جانب سے کئے گئے مختلف اعلانات کا حوالہ دیا جن میں غریبوں کیلئے ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر ، ہر گھر کو صاف پینے کے پانی کی سربراہی، کے جی تا پی جی مفت تعلیم ، ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور اقلیتوں پر مظالم کی روک تھام اور مشن کاکتیہ کے تحت پراجکٹس کی تعمیر جیسے وعدے شامل ہیں لیکن حکومت نے عمل آوری پر توجہ نہیں دی۔ پریس کانفرنس میں ویلفیر پارٹی کے ریاستی صدر سید کمال اطہر ، جنرل سکریٹری محمد وسیم ، ویمنس سیل کی سکریٹری محترمہ عظمت قیام الدین ، اسٹیرنگ کمیٹی ارکان محمد نصراللہ ، سید جلال الدین ظفر کے علاوہ محمد ریاض صدر گریٹر حیدرآباد ، حافظ ارشاد صدر ظہیر آباد یونٹ ، غفران رضوی اور محمد سلیم موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT