Monday , July 23 2018
Home / Top Stories / کے سی آر حکومت میں حیدرآباد سے فسادات کا خاتمہ

کے سی آر حکومت میں حیدرآباد سے فسادات کا خاتمہ

گنگا جمنی تہذیب کا تحفظ ، کانگریس قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت، ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا خطاب
حیدرآباد ۔ 11 ۔ جولائی (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد حیدرآباد میں گنگا جمنی تہذیب کو فروغ حاصل ہوا ہے۔ ٹی آر ایس حکومت نے کے سی آر کی قیادت میں ہندو مسلم اتحاد اور بھائی چارہ کو فروغ دیتے ہوئے شہر سے فسادات کا خاتمہ کردیا۔ محمود علی آج کانگریس پارٹی سے وابستہ گریٹر حیدرآباد کے قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت کے موقع پر خطاب کر رہے تھے ۔ کانگریس کے گریٹر حیدرآباد نائب صدر محمد اعظم کے ہمراہ 200 سے زائد نوجوانوں اور طلبہ نے آج ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ انہوں نے ڈپٹی چیف منسٹر سے ان کی سرکاری قیامگاہ پر ملاقات کرنے کے بعد شہر کی ترقی کیلئے کے سی آر حکومت کے اقدامات کی تائید کا اعلان کیا۔ محمود علی نے کہا کہ نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی اور ان کے تابناک مستقبل کو یقینی بنانے کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ مختلف اقدامات کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہر کو عالمی معیار کا شہر بنانے کیلئے ہزاروں کروڑ کا ترقیاتی منصوبہ تیار کیا گیا ہے ۔ گزشتہ دنوں چیف منسٹر نے حیدرآباد کے لئے 45000 کروڑ کے ترقیاتی منصوبہ کو منظوری دی ۔ اس کے علاوہ ریاست کی دیگر بلدیات کے لئے 10,000 کروڑ کا منصوبہ تیار کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو بہتر بنیادی سہولتوں کی فراہمی حکومت کا عین مقصد ہے۔ محمود علی نے کہا کہ حکومت کے اقدامات سے متاثر ہوکر گریٹر حیدرآباد میں عوام نے بلدی انتخابات میں اپوزیشن کو مسترد کردیا اور ٹی آر ایس کو 99 نشستوں پر کامیابی دلائی ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی راما راؤ شہر کی ترقی کے جامع منصوبہ پر عمل آوری میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست ملک میں ترقی اور فلاحی اقدامات میں سرفہرست ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ ملک میں نمبر ون چیف منسٹر کا موقف حاصل کرچکے ہیں۔ دنیا بھر کی نظریں تلنگانہ کی ترقی پر گامزن ہے اور کئی بین الاقوامی ادارے سرمایہ کاری کے لئے تیار ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ سابقہ حکومتوں نے 65 برس تک حکمرانی کی لیکن شہر کی ترقی کو نظر انداز کردیا ۔ کانگریس اور تلگو دیشم حکومتوں نے شہر کی ترقی کے بلند بانگ دعوے کئے لیکن حقیقت میں یہ دعوے کھوکھلے ثابت ہوئے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں حیدرآباد آئندہ چند برسوں میں عالمی معیار کا شہر بن جائے گا ۔ محمود علی نے کہا کہ سابق میں جب کبھی کوئی تہوار آتا تو شہر کا ماحول کشیدہ ہوجاتا ۔ فرقہ پرست طاقتیں شہر کی پرامن فضا کو بگاڑکر اپنا سیاسی فائدہ حاصل کرتی لیکن کے سی آر نے تلنگانہ ریاست کو فسادات سے پاک کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گنگا اور جمنا تلنگانہ سے نہیں گزرتے لیکن گنگا جمنی تہذیب کا تحفظ اور اس کا فروغ حیدرآباد میں ہوا ہے۔ انہوں نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے ہاتھ مضبوط کریں جو سنہرے تلنگانہ کے تشکیل کی سمت گامزن ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام طبقات کی یکساں ترقی چیف منسٹر کا مقصد ہے۔ اس موقع پر ٹی آر ایس کے سینئر قائدین جیون سنگھ ، کے وینکٹیش اور دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT