Wednesday , September 26 2018
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر نے ذاتی مفاد کے لیے دھرنا چوک کو برخاست کیا

کے سی آر نے ذاتی مفاد کے لیے دھرنا چوک کو برخاست کیا

پریس کلب سوماجی گوڑہ پر منعقدہ تقریب سے پروفیسر کودنڈا رام و دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔ 15مئی(سیاست نیوز) دھرنا چوک پریرکشنا کمیٹی کے قیام کا پہلا تاسیسی پروگرام کا نیوپریس کلب سوماجی گوڑہ میںمنعقدہ کیا گیا۔ کمیٹی کے کنونیر چاڈا وینکٹ ریڈی کی نگرانی میںمنعقدہ اس تقریب میںٹی جے ایس صدر پروفیسر کودنڈارام ‘ سماجی جہدکار پروفیسر ہر گوپال‘ پروفیسر پی ایل ویشویشور رائو‘ راما ملکوٹے‘ کسانوں کی فلاح وبہبود کے لئے جدوجہد کرنے والی شریمتی سجایا‘ ٹی یو ایف صدر ویملا‘ سی پی آئی ایم ایل نیوڈیموکریسی صدر گوردھن ریڈی‘ فاروڈ بلاک لیڈر جانکی رام‘ سی پی آئی ایم قائد ڈی جی نرسنگ رائوکے بشمول دیگر نے تقریب میںشرکت کرتے ہوئے اندرا پارک دھرنا چوک کی بازیابی کا عہد بھی کیا۔ تقریب میں شریک قائدین نے چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو پر جاگیردارانہ نظام کے تحت کام کرنے کا الزام عائد کیا اور کہاکہ عوامی رائے جانے بغیر ذاتی مفادات کے لئے اندرا پارک دھرنا چوک کی برخواستگی کا فیصلہ کیاگیا ۔ مقررین کا کہنا تھا کہ دھرنا چوک کے اطراف واکناف کے مکینوں کا بہانہ بناکر ایک سازش کی گئی تاکہ جمہوری آوازوں کو آسانی کے ساتھ دبایا جاسکے۔مقررین نے کہاکہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل سے قبل دھرنا چوک پوری تلنگانہ تحریک کا مرکز توجہہ تھا او روہا ںسے اٹھنے والی آوازیں دہلی تک پہنچی تھی مگر تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد حکومت کی غلط کارکردگی اور عوام کے ساتھ پیش آنے والی ناانصافیوں کے خلاف آواز اٹھانے کے لئے دھرنا چوک کے استعمال پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ دھرنا چوک کے علاوہ جمہور ی طرز کے احتجاج پر پولیس اجازت کے نام سے پابندی عائد کرنے کے متعلق چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو کے آمرانہ رویہ کو بھی مقررین نے شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ اس موقع پر دھرناچوک پر پابندی کے ضمن میںراماملکوٹے کی تیار کردہ کتاب کی بھی رسم اجرائی عمل میں آئی۔

TOPPOPULARRECENT