Saturday , November 17 2018
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر نے نرسا پور حلقہ اسمبلی کو گود لے کر وعدہ پورا نہیں کیا

کے سی آر نے نرسا پور حلقہ اسمبلی کو گود لے کر وعدہ پورا نہیں کیا

عوام کو سنہرے تلنگانہ کا خواب دکھا کر خاندان کو گولڈن فیملی میں تبدیل کیا : ریونت ریڈی
حیدرآباد ۔ 5 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے شعلہ بیان مقرر ریونت ریڈی نے آئندہ انتخابات میں کانگریس کے زیر قیادت عظیم اتحاد کو بھاری اکثریت سے کامیاب بناتے ہوئے تلنگانہ کو شرابی کے سی آر سے نجات دلانے کی عوام سے اپیل کی ۔ آج اسمبلی حلقہ نرسا پور کے شیوم پیٹ میں منعقدہ روڈ شو سے خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ اس موقع پر کانگریس کی امکانی امیدوار سنیتا لکشما ریڈی کے علاوہ دوسرے قائدین موجود تھے ۔ عوام سے خطاب کرتے ہوئے ریونت ریڈی نے یاد دلایا کہ کے سی آر نے اسمبلی حلقہ نرسا پور کو گود لے کر اس کو مثالی حلقہ میں تبدیل کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ ساڑھے 4 سال تک چیف منسٹر کے عہدے پر فائز رہنے والے کے سی آر نے اپنا کوئی وعدہ پورا نہیں کیا بلکہ سارا وقت فارم ہاوز اور پرگتی بھون میں نشہ کرنے میں گذار دیا ۔ سنہرے تلنگانہ کا خواب دیکھانے کا وعدہ کیا گیا ۔ مگر کے سی آر نے اپنے خاندان کو گولڈن فیملی میں تبدیل کردیا ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے ورکنگ پریسیڈنٹ ریونت ریڈی نے ٹی آر ایس کو شکست دیتے ہوئے شرابی کے سی آر سے تلنگانہ کو نجات دلانے کی عوام سے اپیل کی ۔ ہمیشہ عوام کے درمیان رہنے ترقی پر توجہ دینے والی سنیتا لکشما ریڈی کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنانے کا عوام کو مشورہ دیا ۔ ریونت ریڈی نے کہا کہ ساری ریاست میں کانگریس اور عظیم اتحاد کے امیدوار بھاری اکثریت سے کامیاب ہوں گے ۔ نرسا پور اسمبلی حلقہ کے عوام بھی سنیتا لکشما ریڈی کو کامیاب بناتے ہوئے انہیں حکومت کا حصہ بنائے ۔ تھوڑی سی غفلت اسمبلی حلقہ نرسا پور کو مزید پسماندہ بنا سکتی ہے ۔ عوام اس کا خاص خیال رکھیں ۔ ریونت ریڈی نے عوام سے سوال کیا کہ وہ کے سی آر کے غلام کو کامیاب بنانا مناسب سمجھیں گے یا نرسا پور کے مسائل کو حل کرنے کے لیے اسمبلی میں جدوجہد کرنے والی سنیتا لکشما ریڈی کو کامیاب بنانا پسند کریں گے ۔ اس کا فیصلہ کرلیں ۔ کانگریس ورکنگ پریسیڈنٹ نے کہا کہ انتخابات کے بعد بے قابو کار کے ٹائر پنکچر ہوجائیں گے ۔ کانگریس کی قائد سنیتا لکشما ریڈی نے کہا کہ سنہرے تلنگانہ کا کے سی آر نے عوام کو خواب دیکھایا ۔ انہوں نے کے سی آر سے استفسار کیا کہ خواتین اپنے منگل سوتر فروخت کرنے پر مجبور ہورہی ہیں کیا یہی سنہرا تلنگانہ ہے ۔ اگر یہی گولڈن تلنگانہ ہے تو وہ کے سی آر اور ان کی فیملی کو مبارک تلنگانہ کے عوام خوشحالی چاہتے ہیں ۔ غربت کا خاتمہ چاہتے ہیں ترقی چاہتے ہیں جو صرف کانگریس سے ممکن ہے ۔

TOPPOPULARRECENT