Wednesday , January 17 2018
Home / اضلاع کی خبریں / کے سی آر کا انتخاب عوام کے لئے بے فیض

کے سی آر کا انتخاب عوام کے لئے بے فیض

سابق ایم پی محبوب نگر وٹھل راؤ کا الزام

سابق ایم پی محبوب نگر وٹھل راؤ کا الزام

شاد نگر۔/9مارچ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سابق ایم پی محبوب نگر وٹھل راؤ نے شاد نگر میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ضلع محبوب نگر میں واقع 4پراجکٹوں کے ذریعہ دیڑھ لاکھ ایکڑ اراضی کو سیراب کرنے کیلئے جامع منصوبہ ہے۔ اس کے تحت تعمیری کاموں کو روبہ عمل لاتے ہوئے کام جاری ہیں۔ ضلع محبوب نگر میں واقع کلواکرتی، کوئل ساگر، نیٹم پہاڑ، بھیما پراجکٹوں کی تعمیر کیلئے کروڑہا روپئے منظور کئے گئے۔ محبوب نگر پارلیمانی حلقہ سے نمائندگی کرنے والے ٹی آر ایس پارٹی سربراہ کے چندر شیکھر راؤ 2009 کے انتخابات میں ضلع سے کامیابی حاصل کرنے کے بعد سے ضلع کی ترقی پر کبھی غور و فکر نہیں کی اور نہ ہی ضلع کے متعلق اچھی اور بری کیفیت اور نہ ہی ترقی کیلئے اپنے اثر و رسوخ کا استعمال کیا۔ ضلع کی عوام نے کئی امیدوں کے ساتھ ان کا انتخاب کیا۔ محبوب نگر پارلیمانی حلقہ کی عوام نے گذشتہ پانچ سال سے ان سے کئی امیدیں وابستہ کی تھیں لیکن ٹی آر ایس پارٹی سربراہ کے سی آر ان پانچ سالہ دور میں عوامی مسائل پر کبھی بھی توجہ نہیں دی۔

انہوں نے عوام اور حلقہ کی ترقی کے بارے میں کبھی بھی اپنی توجہ نہیں دکھائی اور نہ ہی کے سی آر نے سال میں ایک مرتبہ منعقد ہونے والے اجلاسوں میں شرکت کی صرف بلند بانگ دعوؤں کے ذریعہ عوام کو ابھی تک دھوکہ میں رکھے ہوئے ہیں اور نہ ہی پارلیمانی حلقہ کیلئے پارلیمنٹ میں ٹھوس نمائندگی کی۔ عوام کی امیدوں کو کے سی آر نے حقیقت میں بدلنے کی کوشش نہیں کی۔ کے سی آر اپنے پارلیمانی حلقہ محبوب نگر میں مہینہ میں ایک مرتبہ بھی دورہ کرنا مناسب نہیں سمجھا۔انہوں نے واضح کیا کہ تلنگانہ ریاست کا قیام بھی کانگریس پارٹی کی وجہ سے عمل میں آیا۔ کانگریس پارٹی پر تنقید کرنا کے سی آر کیلئے زیب نہیں دیتا۔نامکمل پراجکٹوں کیلئے درکار مزید فنڈ مہیا کرنے کا وٹھل راؤ نے تیقن دیا۔ اس موقع پر سابق ایم ایل اے شاد نگر سی پرتاپ ریڈی، وائی یادیا، کے نریندر، محمد علی خاں، اگنوروشوم کے علاوہ دی

TOPPOPULARRECENT