Monday , January 22 2018
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر کو دھکہ ، گجویل میونسپلٹی پر تلگو دیشم کا قبضہ

کے سی آر کو دھکہ ، گجویل میونسپلٹی پر تلگو دیشم کا قبضہ

صدر ٹی آر ایس کی اکثریت پر چہ میگوئیاں ، کانگریس کو صرف ایک نشست

صدر ٹی آر ایس کی اکثریت پر چہ میگوئیاں ، کانگریس کو صرف ایک نشست
حیدرآباد ۔12 ۔ مئی ۔ (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے سربراہ کے چندر شیکھر راو کو آج اس وقت دھکا لگا جبکہ گجویل میں جہاں سے وہ اسمبلی کیلئے مقابلہ کر رہے ہیں، میونسپلٹی پر تلگو دیشم پارٹی نے قبضہ کرلیا۔ چندر شیکھر راؤ جو تلنگانہ کے پہلے چیف منسٹر کی حیثیت سے دیکھے جارہے ہیں، انہیں توقع نہیں تھی کہ گجویل میونسپلٹی پر ان کے کٹر حریف چندرا بابو نائیڈو ان کے لئے مسائل پیدا کریں گے۔ چندر شیکھر راؤ جو تلگو دیشم کو آندھرائی پارٹی قرار دیتے ہیں اور تلگو دیشم اور اس کی قیادت پر تنقید کا کوئی موقع ہاتھ سے گنوانا نہیں چاہتے، انہیں گجویل کے نتیجہ نے حیرت زدہ کردیا ہے ۔ گجویل میونسپلٹی کی جملہ 20 نشستوں میں تلگو دیشم نے 10 پر کامیابی حاصل کرتے ہوئے اکثریت حاصل کرلی ہے جبکہ ٹی آر ایس کو 9 اور کانگریس کو ایک نشست حاصل ہوئی۔چندر شیکھر راؤ حلقہ لوک سبھا میدک کے علاوہ حلقہ اسمبلی گجویل سے مقابلہ کر رہے ہیں۔ اس غیر متوقع نتیجہ کے بعد پارٹی میں گجویل سے چندر شیکھر راؤ کی اکثریت کے بارے میں مختلف باتیں کہی جارہی ہیں۔ ٹی آر ایس کو یقین تھا کہ گجویل سے کے سی آر کے مقابلہ کے سبب میونسپلٹی پر ٹی آر ایس کا قبضہ ہوگا لیکن غیر متوقع طور پر تلگو دیشم نے کامیابی حاصل کرلی ۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ تلگو دیشم نے تلنگانہ کے دیگر اضلاع میں کوئی خاص مظاہرہ نہیں کیا لیکن چندر شیکھر راؤ کے انتخابی حلقہ سے کامیابی کو پارٹی اعزاز سمجھتی ہے۔ تلگو دیشم نے رنگا ریڈی ، نلگنڈہ اور کھمم میں کسی قدر بہتر مظاہرہ کیا جبکہ میدک میں گجویل سے کامیابی حاصل کی۔ گجویل اسمبلی حلقہ کانگریس کا مضبوط گڑھ مانا جاتا ہے اور گزشتہ اسمبلی میں کانگریس کے نرسا ریڈی اس حلقہ کی نمائندگی کرتے تھے۔ کانگریس نے اس بار بھی انہیں کے سی آر کے خلاف میدان میں اتارا ہے۔ گجویل سے کانگریس کو صرف ایک نشست کا حاصل ہونا بھی باعث حیرت ہے۔ دیکھنا یہ ہے کہ گجویل میونسپلٹی کا نتیجہ کس حد تک اسمبلی نتیجہ پر اثر انداز ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT