Monday , June 18 2018
Home / شہر کی خبریں / کے سی آر سیکولر چیف منسٹر اور تلنگانہ ملک کی پرامن ریاست

کے سی آر سیکولر چیف منسٹر اور تلنگانہ ملک کی پرامن ریاست

حج کوٹہ میں اضافہ کی مساعی، خانگی ٹور آپریٹرس سے چوکسی کا مشورہ، قرعہ اندازی تقریب سے محمود علی، اے کے خان اور محمد سلیم کا خطاب
حیدرآباد۔ 11 جنوری (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا جاریہ سال مرکزی حکومت سے حج کا اضافی کوٹہ حاصل کرتے ہوئے تلنگانہ سے کم از کم 4500 عازمین حج کو سفر حج پر روانہ کیا جائے گا۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے گزشتہ سال بھی حج کوٹہ میں اضافہ کے لیے مرکز سے نمائندگی کی تھی۔ انہیں یقین ہے کہ جاریہ سال بھی حج کوٹہ میں اضافہ ہوگا۔ مرکزی حکومت کا کوٹہ 4046 ہے اور اس بات کی کوشش کی جائے گی کہ کم از کم 4500 عازمین تلنگانہ سے روانہ ہوں۔ ڈپٹی چیف منسٹر آج حج 2018ء کے عازمین حج کے انتخاب کے سلسلہ میں منعقدہ قرعہ اندازی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام میں حج کی فرضیت تمام ذمہ داریوں کی تکمیل کے بعد ہے۔ اگر گھر میں لڑکی شادی کے قابل ہو حتی کہ پڑوس میں ہو تو پہلے اس فریضہ کو ادا کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو عازمین کی بہتر سے بہتر خدمت کے حق میں ہیں۔ 2013ء میں متحدہ آندھراپردیش سے 2900 عازمین روانہ ہوتے رہے لیکن تلنگانہ تشکیل کے بعد تین برسوں میں تقریباً 1500 عازمین کا اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عازمین دراصل اللہ کے مہمان ہوتے ہیں اور ان کی خدمت سے حج کا ثواب حاصل ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عازمین کی خدمت انجام دینے والے یقیناً خوش قسمت ہیں۔ محمود علی نے کہا کہ عازمین حج کی روانگی سے لے کر مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں بہتر انتظامات کی حج کمیٹی مساعی کرتی ہے۔ انہوں نے منتخب عازمین حج سے نیک تمنائوں کا اظہار کیا اور دعا کی کہ وہ حج کی تکمیل کے بعد صحت و عافیت سے وطن واپس ہوں۔ انہوں نے عازمین سے اپیل کی کہ وہ چیف منسٹر کے حق میں خصوصی دعاکریں۔ محمود علی نے کہا کہ ملک بھر میں حیدرآباد پرامن شہر اور تلنگانہ پرامن ریاست کی حیثیت رکھتی ہے اور یہ حقیقی معنوں میں سکیولر اسٹیٹ ہے۔ مسلمان خوش قسمت ہیں کہ اللہ تعالیٰ نے کے سی آر جیسے چیف منسٹر کو فائز کیا ہے جو دیگر اقوام کے ساتھ مسلمانوں کی فلاح و بہبود کی فکر کرتے ہیں۔ ملک کی کسی بھی ریاست میں مسلمان کو ڈپٹی چیف منسٹر کا عہدہ نہیں دیا گیا۔ ملک میں مسلمانوں نے 400 برس تک حکمرانی کی اور تلنگانہ کی تشکیل کے بعد مسلمان مایوس ہوچکے تھے کہ انہیں کوئی پوچھنے والا نہیں تھا۔ کے سی آر نے مسلمان کو ڈپٹی چیف منسٹر بناتے ہوئے یہ پیام دیا کہ مسلمان بھائیو! آپ کمزور نہیں ہیں، آپ کے مسائل کے حل کے لیے ڈپٹی چیف منسٹر موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال فریضہ حج کی تکمیل کے بعد آنے والے تقریباً 50 حجاج کرام سے انہوں نے انتظامات کے بارے میں استفسار کیا اور تمام نے اطمینان کا اظہار کیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ عازمین کی خدمت آسان کام نہیں ہے۔ انہوں نے اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ گزشتہ سال ایک عازم کے مکہ مکرمہ میں انتقال پر حج کمیٹی نے صرف دو دن میں ان کے فرزند کو محرم کی حیثیت سے روانہ کرنے کا انتظام کیا تھا۔ محمود علی نے کہا کہ انسانیت کی خدمت ہر پیشہ سے وابستہ افراد کو کرنی چاہئے اور ہر کوئی اسی جذبہ سے سرشار ہو۔ چاہے وہ سیاسی لیڈر ہو یا سرکاری ملازم ہر کسی میں خدمت کا جذبہ ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ حج کمیٹی کے بجٹ کو دو کروڑ سے بڑھاکر تین کروڑ کیا گیا ہے اور جاریہ سال بھی تین کروڑ روپئے منظور کئے جاسکتے ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے میڈیا کی ستائش کی اور کہا کہ میڈیا پر انہیں فخر ہے جو ہر ناانصافی کے خلاف آواز اٹھاتا ہے۔ ناانصافیوں کی اطلاع میڈیا کے ذریعہ ملتی ہے اور حکومت انصاف دلانے کی کوشش کرتی ہے۔ محمود علی نے عوام کو خانگی ٹور آپریٹرس سے چوکس رہنے کا مشورہ دیا اور کہا کہ جب تک ٹور آپریٹر کے پاس حج کوٹہ موجود نہ ہو اس وقت تک رقم ادا نہ کریں۔ کیوں کہ اکثر بغیر حج کوٹہ کے رقم حاصل کرتے ہوئے عوام کو ہراساں کرنے کی شکایات ملی ہیں۔ حکومت کے مشیر اے کے خان نے عازمین سے کہا کہ وہ خانگی ٹور آپریٹرس سے رجوع ہونے سے قبل اس بات کو یقینی بنائیں کہ اس کے پاس کوٹہ موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ اکثر دھوکہ دہی کے واقعات پیش آرہے ہیں اور دو برسوں میں ان واقعات میں کمی ہوئی ہے۔ حج کمیٹی کی جانب سے خانگی ٹور آپریٹرس کو الاٹ کردہ کوٹے کی تفصیلات ویب سائٹ پر پیش کی گئی ہیں۔ اے کے خان نے عازمین کو صحت کا بطور خاص خیال رکھنے کی تاکید کی اور جب تک صحتمند نہ ہو اس وقت تک فرائض حج بہتر طور پر ادا نہیں کیے جاسکتے۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ ہر سال کی طرح جاریہ سال بھی تلنگانہ حکومت بہترین انتظامات کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ عازمین کی خدمت شہرت یا تصویر کشی کے حد تک محدود نہیں ہونی چاہئے بلکہ اللہ کے پاس اجر کی نیت سے خدمت انجام دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ جن کے نام قرعہ اندازی میں شامل نہیں ہوئے وہ مایوسی کا شکار نہ ہوں کیوں کہ اس وقت تک کوئی نہیں جاسکتا جب تک بارگاہ الٰہی سے بلاواہ نہ ہو۔ محمد سلیم نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر ملک کے نمبر ون چیف منسٹر ہیں جنہوں نے اقلیتوں کی بھلائی کے لیے کئی اسکیمات شروع کی ہیں۔ محمد سلیم نے کہا کہ وہ 12 چیف منسٹرس کی کارکردگی سے واقف ہیں لیکن ان تمام میں کے سی آر کا انداز کارکردگی منفرد ہے اور پہلی بار ایسے چیف منسٹر کو انہوں نے دیکھا ہے جو رعایا پرور ہے۔ اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے خیرمقدم کیا اور بتایا کہ حج کمیٹی تلنگانہ کے علاوہ آندھراپردیش اور کرناٹک کے 5 اضلاع کے عازمین کی خدمت کے لیے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی آندھراپردیش کے عازمین حج اور کرناٹک کے 5 اضلاع کے عازمین حیدرآباد امبارگیشن پوائنٹ سے روانہ ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT