Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / کے پودوں اور گملوں کی وی این راؤ ایکسپریس وے پر ایستادگیCOP-11

کے پودوں اور گملوں کی وی این راؤ ایکسپریس وے پر ایستادگیCOP-11

64.65 لاکھ روپیوں کا خرچ، شہر کی شاہراہوں کو خوبصورت بنانے کا جی ایچ ایم سی کا دعویٰ

64.65 لاکھ روپیوں کا خرچ، شہر کی شاہراہوں کو خوبصورت بنانے کا جی ایچ ایم سی کا دعویٰ
حیدرآباد 24 اکٹوبر (سیاست نیوز) 64.65 لاکھ روپئے کے اخراجات کے ذریعہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے پی وی نرسمہا راؤ ایکسپریس وے کو خوبصورت بنانے کا عمل مکمل کیا۔ 11 کیلو میٹر کے اِس ایکسپریس وے کو خوبصورت بنانے تقریباً 5 ہزار روپئے فی گملے کے حساب سے 1298 گملے لگاتے ہوئے اِس راہداری کو پُرکشش بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ بیرون ملک سے حیدرآباد پہونچنے والے مسافرین کو شمس آباد ایرپورٹ کے باہر آنے تک جو خوشگوار ماحول دستیاب ہے وہی خوشگوار ماحول شمس آباد کی اہم شاہراہ سے مانصاحب ٹینک تک بھی دستیاب ہوگا۔ پی وی نرسمہا راؤ ایکسپریس وے کی 11 کیلو میٹر کی راہداری کو خوبصورت بنانے کیلئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے جو اقدامات کئے گئے ہیں اُس سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ شہریوں کو بہتر ماحول کے ساتھ ساتھ خوبصورت سڑکوں کی فراہمی کے اعلانات اب قابل عمل ہونے لگے ہیں۔ جی ایچ ایم سی کی جانب سے پی وی این آر ایکسپریس وے پر 1298 سمنٹ کے تیار کردہ گملے پودوں سمیت لگائے گئے ہیں۔ پی وی این آر ایکسپریس وے پر لگائے گئے 1298 مختلف اقسام کے پودوں کے علاوہ راہداری کے درمیان موجود اسٹریٹ لائٹس پر حیدرآباد اور چارمینار کے ساتھ خوش آمدید کے جملے تحریر کئے گئے ہیں۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے شعبہ شہری بائیو ڈائیورسٹی کی جانب سے لگائے گئے اِن پودوں کے تعلق سے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بلدی عہدیداروں نے بتایا کہ پی وی این آر ایکسپریس وے کو خوبصورت بنانے کیلئے استعمال کئے گئے اِن پودوں کو خریدا نہیں گیا ہے بلکہ مختلف اقسام کے پودے جوکہ 2012 ء کے دوران منعقدہ COP 11 میں استعمال کئے گئے تھے، اُنھیں ہی پی وی این آر ایکسپریس وے پر لگایا گیا ہے۔ اِن پودوں کی نگہداشت کے علاوہ انھیں روزانہ سیراب کرنے کیلئے 5 ہزار لیٹر پر مشتمل پانی کی ٹانکی معہ ایک بورویل نصب کی گئی ہے تاکہ اِن خوبصورت پھول پودوں کو مرجھانے سے بچایا جاسکے۔ 11 کیلو میٹر پر مشتمل مانصاحب ٹینک تا شمس آباد اِس ایکسپریس وے کو خوبصورت بنانے کیلئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے 64.65 لاکھ روپئے خرچ کئے گئے ہیں جس میں گملوں کی منتقلی کے علاوہ پودوں کے علاوہ دیگر کھاد وغیرہ کی لاگت شامل ہے۔ جی ایچ ایم سی کی جانب سے COP 11 میں استعمال کردہ اِن گملوں کے ذریعہ پی وی این آر ایکسپریس وے کو خوبصورت بنانے کے اقدام پر عہدیداروں کی جانب سے اِس کی ستائش کی جارہی ہے۔ اِسی طرح توقع کی جارہی ہے کہ COP 11 کے علاوہ حالیہ عرصہ میں منعقد ہوئی میٹرو پولس ورلڈ کانگریس کے انعقاد کیلئے استعمال شدہ گملوں و دیگر اشیاء کے استعمال کے ذریعہ میٹرو ٹرین کی راہداریوں کو خوبصورت بنانے کے اقدامات بھی کئے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT