Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / ک2000 کے نوٹ برخواست کرنے ، پرانے نوٹوں کے چلن میں توسیع کا مطالبہ

ک2000 کے نوٹ برخواست کرنے ، پرانے نوٹوں کے چلن میں توسیع کا مطالبہ

نریندر مودی حکومت پر عوام کی زندگیوں سے کھلواڑ کرنے کا الزام ، کے نارائینا

حیدرآباد ۔ /4 ڈسمبر (این ایس ایس) سی پی آئی نیشنل سکریٹری کے نارائینا نے آج نوٹوں کی منسوخی کے باعث ہونے والے مسائل کیلئے مرکز پر تنقید کی اور مرکز سے مطالبہ کیا کہ 2 ہزار روپئے کے نوٹس کو برخواست کردیا جائے اور پرانے 500 اور 1000 روپئے کے نوٹس کے استعمال کیلئے وقت میں توسیع دی جائے ۔ تروپتی میں ایس بی آئی پر ایک احتجاجی پروگرام کے دوران سی پی آئی قائد نے نریندر مودی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ بڑے کرنسی نوٹوں کو منسوخ کرتے ہوئے عوام کی زندگیوں سے کھلواڑ کررہی ہے ۔ اور وہ موجودہ بحران پر قابو پانے کیلئے پیشگی اقدامات کرنے میں ناکام ہوگئی ہے ۔ انہوں نے نوٹوں کی منسوخی سے پیدا ہوئی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے چیف منسٹر آندھراپردیش اینچندرا بابو نائیڈو کی صدارت میں کمیٹی تشکیل دینے پر مرکز پر نکتہ چینی کی ۔ عوام کو ہراساں اور پریشاں کرنے کے سونے اور زیورات کے مسئلہ کو اٹھاتے ہوئے خواتین کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے پر مودی کو ایک نیا ظالم شخص قرار دیتے ہوئے ، جبکہ ڈکٹیٹر ہٹلر ظالم تھا ، انہوں نے یہ جاننا چاہا کہ مرکزی حکومت نے مکیش امبانی کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کی ۔ جن کی دختر اوپر سے نیچے تک زیورات پہنی ہوئی دیکھی گئی ۔ اور گالی جناردھن ریڈی نے ان کی دختر کی شادی میں بھاری رقومات خرچ کئے لیکن ان کے خلاف اقدامات نہیں کئے گئے ۔ کالے دھن اور کرپشن کے خلاف منصوبہ صحیح ہے لیکن جس انداز میں پرانے نوٹس کو منسوخ کیا گیا وہ صحیح نہیں ہے ۔ کیونکہ اس سے ملک بھر میں عوام کو کافی مشکلات ہورہی ہیں اور دشواریوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT