Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / گاؤدہشت گردی کے مہلوکین کا معاوضہ ریاستوں کی ذمہ داری

گاؤدہشت گردی کے مہلوکین کا معاوضہ ریاستوں کی ذمہ داری

خلاف ورزی کرنے والوں کو سزاء ، سپریم کورٹ کا فیصلہ ، تاحال 66 واقعات
نئی دہلی ۔ 22 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) گائے کے تحفظ کے نام پر تشدد کا سنجیدگی سے نوٹ لیتے ہوئے سپریم کورٹ نے آجکئی اقدامات پر مبنی حکمنامہ جاری کیا اور ریاستوں کو ہدایت دی کہ ہر ضلع میں بطور نوڈل آفیسر ایک سینئر پولیس عہدیدار کو مقرر کیا جائے۔ جمعہ کے دن سپریم کورٹ نے کہا کہ ریاستوں پر گائے دہشت گردی کے مہلوکین کے ورثا کو معاوضہ ادا کرنے کی ذمہ داری ہے۔ اس کے لئے عدالتی حکم کی کوئی ضرورت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ساتھ ہی ساتھ نظم و ضبط کو اولین ترجیح دی جانی چاہئے اور کوئی شخص بھی جو اس کی خلاف ورزی کرے اس کو سخت سزاء دی جانی چاہئے۔ تین ججس پر مشتمل بنچ نے جس کی قیادت چیف جسٹس آف انڈیا دیپک مشرا کررہے تھے، کانگریس قائد تحسین ایس پوناوالا کی ایک درخواست کی اور کارکن تشارگاندھی کی گائے دہشت گردی پر قابو پانے کی ریاستوں کو ہدایت دینے کی درخواست کی سماعت کررہی تھی۔ بنچ نے کہا کہ ریاستوں کو ایسی اسکیمیں مقرر کرنی چاہئیں جن کے تحت جرائم کے متاثرین بشمول گائے دہشت گردی کے متاثرین کو فوجداری قانون کے مطابق معاوضہ ادا کیا جائے۔ تشار گاندھی کی پیروی کرتے ہوئے سینئر ایڈوکیٹ اندرا جئے سنگھ نے ایک ایسی اسکیم کی خواہش کی تھی جو قانون توڑنے والوں کی وجہ سے متاثرین کے بارے میں ہو۔ انہوں نے جنید کے مقدمہ کا حوالہ دیا جس کو فریدآباد جانے والی ایک ٹرین پر زدوکوب کے ذریعہ ہلاک کردیا گیا تھا اور معاوضہ کی ادائیگی خودکار طریقہ کے تحت ہونی چاہئے تھی۔ تاہم بنچ نے کہاکہ انفرادی مقدمات وسیع تر مسئلہ کے ساتھ شامل نہیں کئے جانے چاہئیں۔ اندرا جئے سنگھ اور سینئر ایڈوکیٹ کپل سبل نے پہلوخان کے مقدمے بھی اٹھائے جسے راجستھان میں ہلاک کردیا گیا تھا اور کہا کہ انصاف رسانی تو دور رہی مہلوکین کے ورثا کو جوابی مقدمات کے ذریعہ ہراساں کیا جارہا ہے۔ سپریم کورٹ نے ریاستوں اور مرکزی زیرانتظام علاقوں سے خواہش کی کہ اس کے 6 ستمبر کے حکمنامہ کی تعمیل کرتے ہوئے 31 اکٹوبر تک نوڈل آفیسرس کا تقرر کیا جائے تاکہ گائے دہشت گردی سے نمٹا جاسکے۔ بنچ کی یہ ہدایات کی اطلاع پانچ ریاستوں گجرات، راجستھان، جھارکھنڈ، کرناٹک اور اترپردیش کو دے دی گئی ہے۔ انہوں نے سابقہ حکمنامہ کی تعمیل کی رپورٹ پیش کی۔ بہار اور مہاراشٹرا 8 دن میں رپورٹ پیش کریں گے۔

چیف سکریٹریوں سے جن کا تعلق باقی 22 ریاستوں سے ہے، حکمنامہ کی تعمیل کی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی گئی ہے تاکہ ایسے گروپس سے نمٹا جاسکے۔ تعمیل کی رپورٹ پیش کی جاتی رہیں گی لیکن کسی بھی شخص کو اپنے فرائض سے سبکدوش نہیں ہونا چاہئے۔ ہم تمام ریاستوں کو ہدایات دیں گے۔ تحفظ گاؤ کے نام پر تشدد کا سخت نوٹ لیتے ہوئے سپریم کورٹ نے کہا کہ سینئر پولیس عہدیدار کو فوری کارروائی کرنی چاہئے اور اس بات کو یقینی بنانا چاہئے کہ گائے دہشت گرد اور ایسے افراد پر مقدمہ چلایا جائے اور اس میں تاخیر سے کام نہ لیا جائے۔ سپریم کورٹ کی بنچ نے کہاکہ نوڈل آفیسرس اس بات کو یقینی بنائیں کہ گائے دہشت گرد بذات خود قانون بننے نہ پائیں۔ عدالت نے ریاستوں سے خواہش کی کہ حکم کے تعمیل کی رپورٹ پیش کی جائے جس کو روکنے کیلئے اقدامات بھی ضروری ہیں۔ بعض قسم کی منصوبہ بند کارروائی کی ضرورت ہے تاکہ دہشت گردی میں اضافہ نہ ہوسکے۔ ایسے کوششیں کی جانی چاہئیں کہ دہشت گردی کو روکا جائے۔ ریاستیں یہ کام کیسے کریں گی۔ یہ ان کی ذمہ داری ہے لیکن دہشت گردی رک جانی چاہئے۔ درخواست گذاروں کی جانب سے اندرا جئے سنگھ نے درخواست گذاروں کی جانب سے کہا کہ جولائی سے اب تک ہجوم کی جانب سے زدوکوب کرکے ہلاک کرنے کے 66 واقعات ہوچکے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT