Wednesday , November 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / گاؤکشی جرم، دیگر جانوروں کی منتقلی یا ذبیحہ پر پابندی نہیں

گاؤکشی جرم، دیگر جانوروں کی منتقلی یا ذبیحہ پر پابندی نہیں

گنیش جلوس میں ڈی جے ساؤنڈ پر امتناع، عادل آباد میں امن کمیٹی کا اجلاس، ایس پی کا خطاب
عادل آباد /13 ستمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) گاؤکشی قانوناً جرم ہے، جب کہ دیگر جانوروں کی منتقلی اور ذبیحہ پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ یہ بات ضلع ایس پی ترون جوشی نے عادل آباد کے ضلع پرجا پرشید ہال میں منعقدہ امن کمیٹی اجلاس کے دوران کہی۔ اس موقع پر سرکاری و غیر سرکاری عہدہ داروں کے علاوہ مساجد کے ائمہ و کمیٹی صدور، ہندو سماج اتسو سمیتی کے قائدین اور گنیش منڈپ کمیٹیوں کے افراد کی کثیر تعداد موجود تھی۔ ضلع ایس پی نے ضلع عادل آباد کی پرامن فضاء کو برقرار رکھنے کی غرض سے ایک دوسرے کے مذہب کے احترام کی خواہش کی اور ڈی جے سسٹم استعمال کرنے پر امتناع عائد کیا۔ رات دس بجے تک صرف دو عدد اسپیکر قابل لحاظ ساؤنڈ پر چلانے کے ہدایت دی، بصورت دیگر قانون شکنی کے پاداش میں قانونی کارروائی کا انتباہ دیا۔ گنیش مورتیاں بٹھانے والے افراد کو اجازت حاصل کرنا لازمی قرار دیتے ہوئے وسرجن کے لئے شاہراہ کی نشاندہی کرنے کی ہدایت دی۔ انھوں نے گنیش پنڈال کی حفاظت کے لئے پنڈال کمیٹی کے دو افراد کو رات کے اوقات میں وہاں موجود رہنے کا پابند کیا اور برقی منقطع ہونے پر تاریکی دور کرنے کی غرض سے گنیش منڈپ پر جنریٹر لگانے کا مشورہ دیا۔ انھوں نے کہا کہ ہر فرد کو مذہب اور فرقہ سے بالاتر ہوکر اپنے آپ کو ہندوستانی محسوس کرتے ہوئے ضلع اور ملک کی ترقی کے لئے خود کو پیش کرنا چاہئے۔ اس موقع پر مقامی جماعت اسلامی کے صدر عتیق الرحمن، نائب صدر بلدیہ فاروق احمد، کانگریس و ٹی آر ایس ٹاؤن کمیٹی کے صدور، ہندو سماج اور گنیش منڈپوں کے قائدین نے اپنے اپنے خطاب میں مختلف تجاویز پیش کیں۔ صدر نشین مجلس بلدیہ شریمتی آر منیشا نے بلدیہ کی جانب سے صفائی کا نظام، سڑکوں کی مرمت، گنیش نمرجن کے دن خواتین کی سہولت کی خاطر عارضی بیت الخلاء مختلف مقامات پر لگانے اور شہر کی بیشتر سڑکوں پر پائے جانے والے آوارہ جانوروں کے ہٹانے سے اتفاق کیا۔ قبل ازیں ڈی ایس پی لکشمی نارائن نے عید الاضحی اور گنیش تہوار کے پیش نظر دونوں طبقات سے ایک دوسرے کا لحاظ رکھتے ہوئے بخوشی تہوار منانے کی خواہش کی۔ آر ڈی او سدھاکر ریڈی کی صدارت میں منعقدہ امن کمیٹی اجلاس میں تحصیلدار سبھاش کے علاوہ محکمہ بلدیہ، محکمہ آبکاری، صحت عامہ، محکمہ برقی اور دیگر محکمہ جات کے عہدہ دار بھی موجود تھے۔ عادل آباد میں اپنی نوعیت کا یہ پہلا امن کمیٹی اجلاس تھا، جس میں سیکڑوں افراد نے شرکت کی۔ ٹریفک سرکل انسپکٹر شیر علی نے تمام انتظامات کو قطعیت دی تھی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT