Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / گاؤ رکھشکوں کیخلاف سخت کارروائی کی ضرورت

گاؤ رکھشکوں کیخلاف سخت کارروائی کی ضرورت

وزیراعظم سے بی ایس پی سربراہ مایاوتی کا مطالبہ
نئی دہلی۔ 10 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی نے آج وزیراعظم نریندر مودی سے مطالبہ کیا ہے کہ ان شرپسندوں کے خلاف سخت کارروائی کریں جوکہ تحفظ گائے کے نام پر دلتوں کو تشدد کا نشانہ بنارہے ہیں۔ محض زبانی ہمدردی سے کچھ ہونے والا نہیں ہے۔ پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مایاوتی نے بتایا کہ آندھرا پردیش میں بھی حال ہی میں دو دلتوں کو زدوکوب کیا گیا ہے جن کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ میں یہ مرکز بالخصوص وزیراعظم سے واضح کردیتی ہوں کہ دلتوں پر مظالم کی روک تھام کیلئے سنجیدہ اقدامات کرے، نہ کہ دلتوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرے۔ پولیس کے مطابق آندھرا پردیش کے ضلع مشرقی گوداوری میں منگل کے دن گاؤ رکھشکوں نے گائے کی کھال اُتارنے کی پاداش میں دلتوں کی زبردست پٹائی کردی تو جبکہ یہ گائے برقی شاک سے ہلاک ہوگئی تھی۔ گائے کے مالک نے گائے کی کھال اتارنے کیلئے دو دلت بھائیوں کو طلب کیا تھا۔ واضح رہے کہ گجرات میں دلتوں پر گاؤ رکھشکوں کے حملے پر غم و غصہ کے اظہار کے بعد وزیراعظم نریندر مودی نے یہ کہا تھا کہ گاؤ رکھشکوں میں غیرسماجی عناصر بھی شامل ہوگئے ہیں جوکہ تحفظ گائے کے نام پر اپنی دکانیں چمکا رہے ہیں۔
آگرہ میں پجاری کے قتل پر کشیدگی
آگرہ۔ 10اگست (سیاست ڈاٹ کام) آگرہ ضلع کے کھنڈ رولی علاقہ میں کل رات جرائم پیشہ افراد نے پجاری کو قتل کرنے کے بعد مندر میں لوٹ مار کی جس کے بعد یہاں کشیدگی پیدا ہوگئی ہے ۔پولیس ذرائع نے آج بتایا کہ مجرموں نے کھنڈورلی علاقہ میں لال مندر پر حملہ کردیا اور پجاری سورن پوری کو قتل کرنے کے بعد وہ 14 قیمتی مورتیاں لوٹ کر لے گئے ۔ ان کی عالمی مارکیٹ میں قیمت ایک کروڑ روپے سے زیادہ ہوگی۔مجرموں مندر کو الٹ پلٹ دیا تھا۔ پجاری کے قتل کی خبر پھیلتے ہی مقامی دیہاتیوں نے مظاہرہ کیا اور علاقہ میں کشیدگی پھیل گئی۔

TOPPOPULARRECENT