Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / ’ گاؤ رکھشک ‘ طاقتوں پر وزیر اعظم نریندر مودی کے موقف کی ستائش

’ گاؤ رکھشک ‘ طاقتوں پر وزیر اعظم نریندر مودی کے موقف کی ستائش

وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی اپا راؤ کی فوری برطرفی پر زور ، کانچا ایلیا کا بیان
حیدرآباد ۔ 8 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : مسٹر کانچا ایلیا نے آج ’گاؤ رکھشک ‘ طاقتوں پر وزیر اعظم نریندر مودی کے موقف کی ستائش کی لیکن کہا کہ وزیر اعظم اگر واقعی سنجیدہ ہیں تو انہیں فوری طور پر حیدرآباد یونیورسٹی کے وائس چانسلر اپا راؤ کو برطرف کردینا چاہئے اور روہیت ویمولہ کیس میں انصاف کو یقینی بنانا چاہئے ۔ تاہم کانچا ایلیا نے کہا کہ اس سلسلہ میں وزیر اعظم نے بہت تاخیر سے بیان دیا ہے کیوں کہ ملک میں بڑی تعداد میں دلتوں پر حملے کیے جارہے ہیں ۔ مسٹر ایلیا نے کہا کہ تلنگانہ میں ایک جلسہ میں وزیر اعظم نریندر مودی نے گاؤ رکھشک طاقتوں اور دلتوں کے مسائل پر بھی ایک موقف اختیار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ اگر یہ لوگ کسی کو ہلاک کرنا چاہتے ہیں تو پھر مجھے ہلاک کریں ۔ انہیں مجھے گولی مار دیں میرے دلت بھائیوں کو نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اور یہ وہ مقام ہے جہاں روہت ویمولہ کو ہلاک کیا گیا اور پھر راجہ سنگھ گاؤ رکھشک کے نام پر مسئلہ پیدا کررہے ہیں جو کہ ایک قومی مسئلہ بن گیا ہے ۔ اس لیے وہ سمجھتے ہیں کہ وزیر اعظم اگر حقیقی معنوں میں سنجیدہ ہیں تو انہیں کم از کم اپا راؤ کو ان کے عہدہ سے ہٹا دینا چاہئے ۔ مسٹر ایلیا نے بی جے پی کے رکن اسمبلی راجہ سنگھ کے خلاف گاؤ رکھشکوں کی مدافعت میں ان کے ریمارکس پر کارروائی کرنے کا بھی مطالبہ کیا ۔ بی جے پی کے اس رکن اسمبلی کے خلاف قبل ازیں یہاں ان کے ریمارکس پر ایک مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ جنہوں نے مبینہ طور پر گجرات میں دلتوں پر حملوں کی مدافعت کی ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے کل دلتوں پر حملوں کو روک دینے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ چاہتے ہیں تو مجھے گولی مار دیں ، دلتوںکو نہیں ۔ اور عوام سے کہا کہ نقلی گاؤ رکھشکوں سے ہوشیار رہیں جو ملک کے اتحاد کے لیے مسئلہ بن گئے ہیں اور وہ صرف سماج کو تباہ کرنا چاہتے ہیں ۔ اس طرح کے نقلی گاؤ رکھشکوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے لیے ریاستی حکومت پر زور دیتے ہوئے وزیر اعظم نے کل سچے گائے پرستاروں سے خواہش کی کہ وہ باخبر رہیں تاکہ چند عناصر ان کے نام کا غلط استعمال نہ کریں ۔۔

TOPPOPULARRECENT