Sunday , September 23 2018
Home / Top Stories / گائے ذبح کرنے کے اعتراف کیلئے سمیع الدین پر زبردستی

گائے ذبح کرنے کے اعتراف کیلئے سمیع الدین پر زبردستی

حاپورمیں گاؤ دہشت گردوں کے وحشیانہ حملے کا دوسرا ویڈیو وائرل

حاپور(اُترپردیش)۔ 23 جون (سیاست ڈاٹ کام) ہاپور میں مبینہ گاؤ دہشت گردوں کے ہاتھوں ایک عمر رسیدہ مسلم شخص کو انتہائی وحشیانہ انداز میں مارپیٹ کرنے کے واقعہ کا دوسرا ویڈیو منظر عام پر آیا ہے جس میں اس باریش ضعیف شخص کو گائے ذبح کرنے کا اعتراف کرنے کیلئے مجبور کیا جارہا ہے۔ نئے ویڈیو میں 65 سالہ سمیع الدین جو ایک موٹر سائیکل سوار سے معمولی بحث و تکرار کے بعد بہیمانہ زدوکوب کا نشانہ بنائے جانے والے بے قصور افراد میں شامل تھے، انہیں جنونی حملہ آوروں سے بار بار درخواست کرتے ہوئے بتایا گیا ہے، لیکن بے رحم انتہا پسند جنونی ان سے اصرار کررہے تھے کہ گائے ذبح کرنے والوں کی شناخت بنائیں۔ جوان سال اور طاقتور نوجوانوں کی وحشیانہ مارپیٹ کے شکار سمیع الدین کے سَر اور جسم سے خون بہہ رہا تھا۔ نیا ویڈیو مختلف ٹی وی چیانلوں پر بھی دکھایا گیا۔ موضع بچیڈا میں 18 جون کو پیش آئے المناک واقعہ کے بعد انٹرنیٹ پر ایک اور ویڈیو منظر عام پر گشت کرنے لگا ہے جس میں ایک شخص کھیت میں پڑا ہے اور اس کے جسم پر کئی ضربات موجود تھے اور وہ خون میں لت پت حالت میں تڑپ رہا تھا۔ پولیس نے قبل ازیں کہا کہ 45 سالہ قاسم کو ایک موٹر سائیکل سوار سے معمولی بحث و تکرار کے بعد ہجومی تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ پولیس نے ان اطلاعات کی تردید کی تھی کہ ہجوم نے گائے ذبح کرنے کی افواہوں پر قاسم اور سمیع الدین کو بے رحمانہ ہجومی تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ اس حملے میں شدید زخمی قاسم کے ساتھ کئے گئے سلوک پر اترپردیش پولیس نے گزشتہ روز معذرت خواہی کی تھی۔ سمیع الدین کے بھائی نے دہلی میں کل کہا تھا کہ اترپردیش پولیس نے ان کے خاندان کی طرف سے کی گئی شکایت کے مطابق ایف آئی آر درج نہیں کیا۔

TOPPOPULARRECENT