Tuesday , December 18 2018

گاندھی جی کی زندگی پر عربی زبان میں کتاب

قاہر ۔ 19ستمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سال 2011میں جب سابق صدر مصر حسنی مبارک کی برطرفی کیلئے تحریک چلائی گئی اس وقت لاکھوں کی تعداد میں مصری عوام تحریراسکوائرپرجونعرہ لگارہے تھے،وہ تھا’’سیلمیا،سیلمیا‘‘ یہ ایک عربی لفظ ہے جسکے معنے ہیں ’’امن‘‘ ،اس وقت میں نے در اصل گاندھی جی کو سناتھا‘‘ان خیالات کا اظہار ہندستانی سفیر برائے مصر نود

قاہر ۔ 19ستمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سال 2011میں جب سابق صدر مصر حسنی مبارک کی برطرفی کیلئے تحریک چلائی گئی اس وقت لاکھوں کی تعداد میں مصری عوام تحریراسکوائرپرجونعرہ لگارہے تھے،وہ تھا’’سیلمیا،سیلمیا‘‘ یہ ایک عربی لفظ ہے جسکے معنے ہیں ’’امن‘‘ ،اس وقت میں نے در اصل گاندھی جی کو سناتھا‘‘ان خیالات کا اظہار ہندستانی سفیر برائے مصر نودیپ سوری نے اس وقت کیا جب وہ سابق سفیر پی اے نذارت کی کتاب ’’گاندھی جی کی غیرمعمولی قیادت‘‘ کی عربی زبان میں کئے گئے ترجمہ کا اجراء کررہے تھے۔ اگرچہ گاندھی جی کی شخصیات پر سینکڑوں کتابیں تحریر کی گئی ہیں تاہم سابق سفیر برائے مصر نذارت نے کہاکہ اُنھوں نے گاندھی جی کے دنیا کے اُن ممالک پر پڑنے والے اثرات کا انتخاب کیا ہے جس میں مصر ، فلسطین اور جنوبی افریقہ شامل ہیں۔ انھوں نے کہاکہ میں چاہتا تھا کہ میری کتاب میں گاندھی جی کے دنیا پر پڑنے والے اثرات کے حوالے سے اُن ممالک کا تذکرہ کروں جہاں پر گاندھی جی کی شخصیات کا اثر وہاں کے قائدین نے قبول کیا ہے ۔ حتیٰ کہ چلی ، بولیویا ، مصر اور دیگر ممالک شامل ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ میں چاہتا تھا کہ گاندھی جی کی خصوصیات اور اُن کی قیادت کو انقلاب فرانس کے بعد پائے جانے والے جدید قیادت سے موازانہ کروں اور میں ایسا کرنے میں کامیاب رہا ۔

TOPPOPULARRECENT