Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / گاندھی جی کے قاتلوں کے نظریات پر نریندر مودی حکومت کا عمل

گاندھی جی کے قاتلوں کے نظریات پر نریندر مودی حکومت کا عمل

بی جے پی پر ملک کو توڑنے کا الزام ، کانگریس ملک کو جوڑ رہی ہے : ڈگ وجئے سنگھ کا ادعا
حیدرآباد ۔ 19 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): جنرل سکریٹری آل انڈیا کانگریس کمیٹی مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے کہا کہ بی جے پی ملک کو توڑنے کا اور کانگریس ملک کو جوڑنے کا کام کرتی ہے ۔ گاندھی جی کا قتل کرنے والوں کے نظریات پر نریندر مودی حکومت کام کررہی ہے ۔ کانگریس پارٹی ہر مذہبی فرقہ پرستی کا ڈٹ کر مقابلہ کرے گی پارٹی سے زیادہ ملک کے مفادات کو اہمیت دے گی ۔ چارمینار پر منعقدہ سدبھاونا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے کہا کہ غلام نبی آزاد ملک میں سدبھاونا کی مثال ہیں ۔ ہندوستان امن و امان کا مزاج رکھنے والا دیش ہے لیکن سیاسی مفاد پرستی کے لیے بی جے پی اور ہندوتوا طاقتیں ملک میں فرقہ پرستی کا زہر گھول رہی ہیں ۔ ملک میں گاندھی جی کے قاتل کے نظریات رکھنے والی طاقتیں حکومت کررہی ہیں ۔ بی جے پی میں دوہری پالیسی پر عمل کیا جارہا ہے ۔ سیاسی مفادات کے لیے کوئی امن کی بات کرتا ہے اور کوئی تشدد کی بات کرتا ہے ۔ بی جے پی کے زیر قیادت این ڈی اے حکومت کو آر ایس ایس چلا رہی ہے ۔ ملک کے عوام کو مذہب کے نام پر بانٹ کر بی جے پی راج کررہی ہے ۔ اس ملک میں مساجد اور منادر کی کوئی کمی نہیں ہے ۔ مگر افسوس اس بات کا ہے کہ سدبھاونا کے نظریات گھٹ رہے ہیں جو قابل فکر ہیں اس پر خاص طور پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ کانگریس پارٹی امن وامان ، بھائی چارگی اور سدبھاونا کے نظریات پر ایقان رکھنے والی جماعت ہے ۔ 2014 کے عام انتخابات میں سارے ملک میں بی جے پی کو صرف 31 فیصد ووٹ حاصل ہوئے ہیں 69 فیصد عوام نے بی جے پی کے خلاف ووٹ دیا ہے ۔ کانگریس کو کمزور کرنے کے لیے عوام کو مذہب کے نام پر تقسیم کرتے ہوئے خود سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کررہی ہیں ۔ مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے کہا کہ فرقہ پرستی زہر ہے اور اس کو زائل کرنے کے لیے کانگریس پارٹی مقابلہ کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ دوسری جماعتیں اور ان کے قائدین اپنی جماعتوں اور عہدوں کو اہمیت دیتے ہیں تاہم کانگریس پارٹی پہلے ملک کو بعد میں پارٹی کے مفادات کو اہمیت دیتی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT