Monday , July 16 2018
Home / سیاسیات / گاندھی خاندان کا کوئی فرد 30 سال سے حکومت کا حصہ نہیں رہا

گاندھی خاندان کا کوئی فرد 30 سال سے حکومت کا حصہ نہیں رہا

وزیراعظم نریندر مودی پر جھوٹ بیانی کے ذریعہ عوام کو گمراہ کرنے کانگریس کا الزام
نئی دہلی ۔27 نومبر ۔( سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج وزیراعظم نریندر مودی پر جواہر لال نہرو کی گراں قدر خدمات کے بارے میں جھوٹے بیانات کے ذریعہ گجرات کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کا الزام عائد کیااور کہاکہ اس سے اُن کی منفی ذہنیت کا اظہار ہوتا ہے۔ کانگریس پر خاندانی سیاست کے الزام کا حوالہ دیتے ہوئے پارٹی کے سینئر ترجمان آنند شرما نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی یہ بھول چکے ہیں کہ کانگریس نے لال بہادر شاستری اور منموہن سنگھ جیسے وزیراعظم دیئے جن کا تعلق عام گھرانے سے ہے ۔ نہرو ۔ گاندھی خاندان کا دفاع کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ تقریباً تین دہوں سے اس خاندان کا کوئی بھی فرد حکومت کا حصہ نہیں رہا ۔ آنند شرما نے مودی کے اس دعویٰ کی مذمت کی کہ پہلے وزیراعظم ہند پنڈت جواہر لعل نہرو نے گجرات کے لئے کچھ نہیں کیا۔ آنند شرما نے الزام عائد کیا کہ اس قسم کی مہم سے بی جے پی کو گجرات میں ہونے والی شکست کے سبب مایوسی کا اظہار ہوتا ہے۔ کانگریس کے سینئر لیڈر نے کہاکہ ’’وزیراعظم غیرصحتمندانہ رجحان کے حامل ہوگئے ہیں اور یہ ایک ایسا مسئلہ ہے جو ملک کیلئے باعث تشویش ہوسکتا ہے‘‘۔ آنند شرما نے دعویٰ کیا کہ ’’گجرات میں کانگریس کو ملنے والی تائید میں اضافہ سے بی جے پی مایوس اور پریشان ہوگئی ہے ‘‘۔ آنند شرما نے گجرات میں نہرو کی جانب سے شروع کئے گئے کئی پراجکٹس کا تذکرہ کیا ۔ انھوں نے کہاکہ وزیراعظم کو غلط بیانی سے کام نہیں لینا چاہئے ۔ وہ عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ انھوں نے جاننا چاہا کہ مودی حکومت نے گجرات میں اب تک کیا کیا ؟ اس کافیصلہ عوام پر چھوڑ دیا جانا چاہئے ۔ مودی اپنی حکومت کی دیانتداری کا سرٹیفکیٹ نہ دیں ۔ یہ فیصلہ تو خود عوام ہی کریں گی کیونکہ اُن کی حکومت میں بھی کئی لوگ داغدار تھے اور بڑے اسکامس پر پردہ ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT