Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / گجرات اسمبلی انتخابات میں بھی کانگریس کامیاب ہوگی : احمد پٹیل

گجرات اسمبلی انتخابات میں بھی کانگریس کامیاب ہوگی : احمد پٹیل

NEW DELHI, AUG 10 (UNI):- Newly elected Rajya Sabha MP Ahmed Patel at Parliament house in New Delhi on Thursday. UNI PHOTO-AK11U

بی جے پی حکومت ہر محاذ پر ناکام، نوجوان ’’گدی چھوڑ و‘‘ تحریک شروع کریں، جنتر منتر پر احتجاجی ریالی
نئی دہلی 10 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) راجیہ سبھا انتخابات میں شاندار کامیابی سے سرشار سینئر کانگریس لیڈر احمد پٹیل نے آج کہاکہ بی جے پی نے اِس مقابلہ کو وقار کا مسئلہ بنالیا تھا۔ اُنھوں نے اِس یقین کا اظہار کیاکہ جاریہ سال کے اواخر میں منعقد شدنی گجرات اسمبلی انتخابات میں کانگریس کامیاب ہوگی۔ احمد پٹیل نے ایوان بالا کے لئے راجیہ سبھا کی نشست پر ایسے حالات میں کامیابی حاصل کی جبکہ بی جے پی نے اسے ایک پیچیدہ مسئلہ بنادیا تھا۔ اُنھوں نے کہاکہ اِس کامیابی نے کانگریس کو ایک نئی جہت عطا کی ہے اور پارٹی کیڈر میں جوش و خروش پیدا ہوا ہے۔ اُنھیں یقین ہے کہ گجرات اسمبلی انتخابات میں بھی کانگریس کامیاب ہوگی۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی نے اِسے وقار کا مسئلہ بنادیا تھا اور یہ اُس کی شکست ہے۔ احمد پٹیل نے جنتر منتر پر یوتھ کانگریس کی منعقدہ احتجاجی ریالی کے موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ کانگریس پارٹی 1995 ء سے گجرات میں اقتدار سے باہر ہے۔ احمد پٹیل نے وزیراعظم نریندر مودی اور بی جے پی صدر امیت شاہ پر تنقید کرتے ہوئے اِن دونوں پر مرکزی تحقیقاتی ایجنسیوں کے بیجا استعمال کا الزام عائد کیا۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی کو اِن دو افراد سے بھی خوف ہے۔ ایک دستوری اتھاریٹی ہے اور دوسری ماورائے دستور اتھاریٹی ہے۔ آپ جانتے ہیں یہ دو افراد کون ہیں۔

اُنھوں نے کہاکہ تمام ایجنسیوں کا بیجا استعمال ہورہا ہے۔ اُنھوں نے بی جے پی قائدین کا نام لئے بغیر یہ ریمارکس کئے۔ راجیہ سبھا انتخابات کے دوران بھی کانگریس نے گجرات اور مرکز میں بی جے پی حکومتوں پر یہ الزام عائد کیا تھا کہ وہ سرکاری مشنری کا استعمال کرتے ہوئے کانگریس ارکان اسمبلی پر دباؤ ڈال رہے ہیں۔ یہاں تک کہ وہ پارٹی ارکان کو اپنا شکار بنانے کے لئے بنگلورو میں واقع ریسارٹ تک بھی پہونچ گئے تھے۔ انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ نے کرناٹک کانگریس کے وزیر کی رہائش گاہ پر دھاوے کئے اور اِس کا مقصد پارٹی ارکان اسمبلی کو خوف زدہ کرنا تھا۔ احمد پٹیل کانگریس میں انتہائی بااثر شخصیت سمجھے جاتے ہیں اور وہ سونیا گاندھی کے پولٹیکل سکریٹری بھی ہیں۔ اُنھوں نے دعویٰ کیاکہ بی جے پی نے کانگریس ارکان اسمبلی کو اپنا موقف بدلنے کے لئے 15 کروڑ روپئے کی پیشکش کی لیکن ہر ایک نے اِسے مسترد کردیا۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی کے خلاف نوجوانوں کو آواز اُٹھانی چاہئے اور وہ ’’گدی چھوڑو‘‘ مہم شروع کریں۔ بی جے پی نے ہر سال دو کروڑ ملازمتوں اور کسانوں کو اُن کی پیداوار سے 50 فیصد زیادہ منافع کا وعدہ کیا تھا، اُنھوں نے یہ بھی کہا تھا کہ افراط زر اور کرپشن پر قابو پایا جائے گا لیکن بی جے پی حکومت ہر محاذ پر ناکام رہی۔ کانگریس قائدین سی پی جوشی اور راج ببر نے بھی اِس احتجاجی ریالی سے خطاب کیا۔ یوتھ کانگریس صدر امریندر سنگھ راجہ کی زیرقیادت پارٹی کارکنوں نے پارلیمنٹ کی سمت مارچ کیا لیکن پولیس نے اُنھیں حراست میں لے لیا۔

TOPPOPULARRECENT