Sunday , October 21 2018
Home / شہر کی خبریں / گجرات اسمبلی میں مسلم اراکین کی تعداد میں کمی

گجرات اسمبلی میں مسلم اراکین کی تعداد میں کمی

اسمبلی کے 18 حلقوں میں مسلم رائے دہندوںکا ووٹ فیصلہ کن
حیدرآباد ۔ 19 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : گجرات قانون ساز اسمبلی میں مسلم اراکین اسمبلی کی تعداد تشویش ناک حد تک کم ہوتی جارہی ہے ۔ گجرات کی آبادی تقریبا 6.7 کروڑ ہے ۔ جن میں مسلم آبادی کا تناسب 9.7 فیصد ( 65 لاکھ ) ہے ۔ ریاست کے جملہ 182 اسمبلی حلقوں میں 18 اسمبلی حلقہ جات میں کسی بھی امیدوار کی کامیابی و ناکامی پر مسلمان اثر انداز ہوسکتے ہیں ۔ مگر اس مناسبت سے اسمبلی میں ان کی نمائندگی نہیں ہورہی ہے ۔ 1980 میں کثیر تعداد میں یعنی 12 مسلم اراکین اسمبلی منتخب ہوئے تھے ۔ اور اس وقت انتخابی میدان میں جملہ 17 مسلم امیدواروں نے حصہ لیا تھا ۔ جب کہ 1985 میں 11 مسلم امیدواروں نے انتخابات میں حصہ لیا تھا جن میں سے 8 مسلم امیدواروں نے کامیابی حاصل کی تھی ۔ 1990-1985 میں ریاست کی مسلم آبادی کے تناسب سے بڑھ کر مسلم اراکین منتخب ہوئے تھے اور اس کے بعد سے لگاتار مسلم اراکین اسمبلی کی تعداد میں کمی ہوتی جارہی ہے ۔ 1995 میں صرف اور صرف ایک ہی مسلم رکن اسمبلی منتخب ہوئے تھے جب کہ 1998 میں بی جے پی کی جانب سے ایک مسلم امیدوار نے رکن اسمبلی کی حیثیت سے کامیابی حاصل کی تھی اور اب 2017 کے انتخابات میں بی جے پی نے ایک بھی مسلم امیدوار کو ٹکٹ نہیں دیا مگر کانگریس نے 6 مسلم امیدواروں کو ٹکٹ دی جن میں سے تین مسلم امیدوار یوسف عمران کھیڑوالا حلقہ اسمبلی جمال پور کھاڈیا سے 29,000 ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کی تو دوسرے امیدوار محمد جاوید عبدالمطلب پیرزادہ نے حلقہ اسمبلی ونکانپر سے کامیابی حاصل کی تو تیسرے امیدوار شیخ غیاث الدین حبیب الدین نے حلقہ اسمبلی دریاپور سے کامیابی حاصل کی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT