Wednesday , September 19 2018
Home / سیاسیات / گجرات انتخابات : بی جے پی اور کانگریس کی قطعی فہرستیں جاری

گجرات انتخابات : بی جے پی اور کانگریس کی قطعی فہرستیں جاری

میوانی کانگریس کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار، عام آدمی پارٹی کا امیدوار کھڑا نہ کرنے کا اعلان
احمد آباد ۔27 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) دوسرے مرحلہ کے گجرات انتخابات کے لیے پرچہ جات نامزدگی داخل کرنے کے آخری دن بی جے پی نے آج 34 امیدواروں کی اپنی قطعی فہرست جاری کردی۔ 5 ارکان اسمبلی کو حذف کردیا۔ ایک وزیر اور سابق چیف منسٹر آنندی بین پٹیل کو شامل کرلیا گیا۔ آنندی بین گھٹلوڈیا (احمدآباد) نشست سے امیدوار ہوں گی۔ قبل ازیں اعلان کیا گیا تھا کہ وہ انتخابات میں حصہ نہیں لیں گی۔ آنندی کی نشست سے بی جے پی کے وزیر روہت پٹیل کو ہٹادیا گیا ہے۔ دیگر ارکان اسمبلی جنہیں ٹکٹ نہیں دیئے گئے ناگرجی ٹھاکر (رادھاپور)، آر ایم پٹیل (اسروا ایس سی) اور ونچیا گھوریا (لنکھیڑا ایس ٹی) حلقے ہیں۔ سابق وزیر اور ترجمان جین نارائن ویاس سدھ پور سے امیدوار ہوں گے۔ وہ 2012ء کے انتخابات میں ناکام رہے تھے۔ کانگریس نے بھی آج 14 امیدواروں کی آخری فہرست جاری کردی۔ دو نشستیں حلیف پارٹیوں کے لیے چھوڑ دی گئیں جبکہ دلت قائد جگنیش میوانی آزاد امیدوار کی حیثیت سے جنہیں کانگریس کی تائید حاصل ہوگی، وٹگام کی نشست سے مقابلہ کریں گے۔ اپنے 4 موجودہ ارکان اسمبلی کو کانگریس نے امیدوار بنایا ہے۔ سابق جے ڈی یو رکن اسمبلی چھوٹو بھائی واسوا کی پارٹی بھارتیہ ٹراویل پارٹی کے لیے دو نشستیں چھوڑدی گئی ہیں۔ عام آدمی پارٹی نے اعلان کیا ہے کہ وہ دلت قائد میوانی کے خلاف اپنا امیدوار کھڑا نہیں کرے گی۔ کانگریس نے وٹگام (ایس سی) کی نشست بناس کنٹھا سے اپنا امیدوار کھڑا نہیں کیا بلکہ میوانی کی تائید کا اعلان کیا۔ جنہوں نے بی جے پی حکومت کے خلاف دلت تحریک کی قیادت کی ہے۔ کانگریس برادری کے قائدین پاٹیدار کوٹہ احتجاج کے قائد ہاردک پٹیل، میوانی اور ٹھاکر کو ترغیب دے رہی ہے تاکہ بی جے پی کو اقتدار سے بے دخل کیا جاسکے۔ بی جے پی گزشتہ 20 سال سے ریاست گجرات میں برسر اقتدار ہے۔ دوسرے مرحلہ کے انتخابات کے لیے کانگریس نے کل رات 76 امیدواروں کے نام کا اعلان کیا تھا۔ چوتھے اور آخری امیدوار منگل پور حلقہ کے چراغ زویری کو پرویش بوئیلا کی جگہ امیدوار بنایا گیا ہے۔ مہودھا نشست پر طویل عرصہ سے نٹورسنگھ ٹھاکر قابض تھے۔ اب پارٹی نے ان کے فرزند اندرجیت سنہہ کو اپنا امیدوار بنایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT