Monday , October 22 2018
Home / شہر کی خبریں / گجرات انتخابات سے کانگریس میں نئی جان پیدا ہوگئی ‘ ویرپا موئیلی

گجرات انتخابات سے کانگریس میں نئی جان پیدا ہوگئی ‘ ویرپا موئیلی

راہول گاندھی کو پارٹی میں ’ بڑی سرجری ‘ کرنے کی ضرورت ۔ سابق چیف منسٹر کرناٹک کا بیان
حیدرآباد 21 ڈسمبر ( پی ٹی آئی ) گجرات انتخابات سے کانگریس میں نئی جان آگئی ہے اور اس کی سیاسی قسمت کا احیاء عمل میں آیا ہے ۔ پارٹی کے سینئر لیڈر ایم ویرپا موئیلی نے یہ بات کہی ۔ انہوں نے پی ٹی آئی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس صدر راہول گاندھی کو چاہئے کہ اب وہ پارٹکی میں بڑی سرجری کریں اور پردیش کانگریس کمیٹی صدور کے علاوہ ریاستوں کے انچرجس کو تبدیل کریں جو انتخابی محاذ پر کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کا نہ صرف احیاء عمل میں آیا ہے بلکہ گجرات کے حالیہ انتخابات میں اس کی کارکردگی سے پارٹی میں نئی جان بھی پیدا ہوگئی ہے ۔ سابق چیف منسٹر کرناٹک نے کہا کہ اب آئندہ جہاں کہیں انتخابات ہونگے کانگریس پارٹی کامیابی حاصل کریگی ۔ کانگریس پارٹی میں نئی جان ڈالنے میں کانگریس کے نئے صدر کو درپیش چیلنجس پر اظہار خیال کرتے ہوئے ویرپا موئیلی نے کہا کہ جہاں کہیں لوگ ایک یا دو انتخابات میں ناکام ہوجائیں چاہیں وہ ریاستوں کے کل ہند کانگریس انچارچ ہوں یا پھر پردیش کانگریس کے صدور ہوں انہیں تبدیل کردیا جانا چاہئے ۔ یہاں نئے چہروں کو ذزہ داریاں دینے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاستوں میں بھی ایسے لوگ ہیں جو مقامی اور اسمبلی انتخابات میں مسلسل ناکام ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پردیش کانگریس کے ایسے صدور کو برقرار رکھنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے ۔ موئیلی نے کہا کہ ایسے کل ہند کانگریس انچارجس اور ریاستوں کے پردیش کانگریس صدور کی ناکامیوں کی وجہ سے اب کانگریس کو مزید انتخابات میں شکست کا خطرہ نہیں مول لینا چاہئے ۔ موئیلی نے سابقہ یو پی اے حکومت میں کئی وزارتوں میں کام کیا ہے ۔ اس سوال پر کہ آیا پارٹی میں تنظیمی رد و بدل کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ یقینی طور پر اس کی ضرورت ہے ۔ راہول گاندھی کو ایک بڑی سرجری کرنے کی ضرورت ہے ۔ کانگریس میں کافی طاقت ہے اور اس کے لیڈر میں بھی طاقت ہے ۔ ہمیں اس طاقت کو آگے بڑھانے کی ضرورت ہے ۔

TOPPOPULARRECENT