Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / گجرات اور گجراتی ہمیشہ نہرو ۔ گاندھی خاندان کوکھٹکتے ہیں:مودی

گجرات اور گجراتی ہمیشہ نہرو ۔ گاندھی خاندان کوکھٹکتے ہیں:مودی

گاندھی نگر ۔16 اکٹوبر۔( سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج کانگریس اور نہرو ۔ گاندھی خاندان پر تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ وہ گجرات اور گجراتیوں کو پسند نہیں کرتے ، وہ اُنھیں اپنی آنکھ میں کھٹکنے والا کانٹا سمجھتے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ گجرات نے سردار ولبھ بھائی پٹیل اور مرارجی دیسائی جیسے قد آور قائدین کانگریس اور نہرو ۔ گاندھی خاندان کے علاوہ ملک کو دیئے ہیں، لیکن اس پارٹی اور اس خاندان نے اُنھیں نظرانداز کردیا ۔ گجرات میں جہاں عنقریب انتخابات منعقد ہونے والے ہیں اپنے دورہ کے موقع پر تقریر کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ کانگریس نے اُنھیں جیل بھیج دینے کی سازش کی تھی ۔ وہ واضح طورپر اُن الزامات کا حوالہ دے رہے تھے جو 2002 ء کے مابعد گودھرا فسادات کے سلسلے میں اُن پر عائد کئے گئے تھے ۔ انھںو نے کہاکہ اہم اپوزیشن پارٹی اب منفی سیاست پر عمل پیرا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس کو آئندہ گجرات اسمبلی انتخابات میں ترقی کے موزوں پر مقابلہ کرنے کا وہ چیلنج کرتے ہیں۔ گجرات کے انتخابات قریب ہیں اور کانگریس اایسا کرنے کی ہمت نہیں کرسکتی ۔ انھوں نے مرارجی دیسائی کے کارناموں کا تذکرہ نہیں کیا اور نہ مہاتما گاندھی کے نظریات سے اُن کی وابستگی کا ذکر کیابلکہ اُنھوں نے اُن کے کھانے اور پینے کی عادات کا تذکرہ کیا ۔ دیہات بھات میں بی جے پی کا ایک زبردست جلسہ عام منعقد کیا گیا تھا ۔ انھوں نے جلسہ میں تقریر کرتے ہوئے کانگریس قائد مادھو سنہہ سولنکی کے استعفیٰ کا تذکرہ کرتے ہوئے کانگریس کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ وہ اُس وقت وزیر خارجہ تھے جبکہ مبینہ طورپر بوفورس اسکینڈل کی تحقیقات کو ناکام بنادیا گیا تھا ۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس اور نہرو ۔ گاندھی خاندان جی ایس ٹی سے ترک تعلق کا اظہار کررہا ہے حالانکہ یہ دونوں اس کے مساوی شراکت دار ہیں۔ کانگریس اس فیصلے کی مساوی حصہ دار ہے اُسے جی ایس ٹی کے بارے میں غلط باتیں نہیں پھیلانی چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT