Thursday , January 18 2018
Home / Top Stories / گجرات اور ہماچل پردیش میں بی جے پی کو اقتدار ‘ ایگزٹ پولس

گجرات اور ہماچل پردیش میں بی جے پی کو اقتدار ‘ ایگزٹ پولس

۔150 نشستوں پر کامیابی کا بی جے پی کا دعوی پورا نہیں ہوگا ۔ کانگریس اور پاٹیدار قائدین کی جارحانہ انتخابی مہم کا خاطر خواہ اثر نہ ہوسکا ۔ ہماچل پردیش میں سادہ اکثریت

نئی دہلی، 14 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) گجرات میں آج دوسرے مرحلے کی رائے دہی مکمل ہوئی اور اس کے فوری بعد جو ایگزٹ پولز سامنے آئے ہیں ان میں پیش قیاسی کی گئی ہے کہ ریاست میں بی جے پی اپنے 22 سالہ طویل اقتدار کو برقرار رکھے گی ۔ اس کے علاوہ ہماچل پردیش کیلئے ایگزٹ پولس میں بھی بی جے پی کے اقتدار کی ہی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ گجرات انتخابات کیلئے شدت کے ساتھ مہم چلائی گئی اور کانگریس نے اس یقین کا اظہار کیا تھا کہ وہ ریاست میں بی جے پی کو اقتدار سے بیدخل کرے گی ۔ بی جے پی نے اس بار اپنی عددی طاقت میںاور اضافہ کے دعوے کے ساتھ مقابلہ کیا تھا اور اس کا کہنا تھا کہ 182 رکنی اسمبلی میں اسے 150 سے زائد نشستوں پر کامیابی حاصل ہوگی۔ دوسرے مرحلہ کی رائے دہی کے بعد مختلف اداروں اور ٹی وی چینلوں کی جانب سے ایگزٹ پولس پیش کئے گئے ہیں۔ سی ووٹر ۔ ٹائمز آف انڈیا آن لائین کے سروے میں بی جے پی کو 108 اور کانگریس کو 74 نشستیں ملنے کی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ اس کے علاوہ ٹائمز ناؤ ۔ وی ایم آر کے ایگزٹ پول میں بی جے پی کیلئے 109 اور کانگریس کیلئے 70 نشستوں کی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ انڈیا ٹوڈے ۔ ایکس کے سروے میں بی جے پی کیلئے 107 اور کانگریس کیلئے 74 نشستیں ملنے کی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ اے بی پی ۔ سی ایس ڈی ایس کے سروے میں بی جے پی کیلئے سب سے زیادہ 117 اور کانگریس کیلئے سب سے کم 64 نشستوں کی پیش قیاسی کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ مقامی چینل ’’جن کی بات‘‘ کے سروے میں بی جے پی کو 115 نشستیں ملنے کی امید ظاہر کی گئی ہے جبکہ کانگریس کیلئے 65 نشستوں کی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ رائے دہی کے فوری بعد ان ایگزٹ پولس کے سامنے آنے کے بعد بی جے پی کے حلقوں میں مسرت کا اظہار کیا جانے لگا ہے۔ تاہم کسی بھی سروے میں بی جے پی کا یہ دعویٰ درست ثابت ہوتا نہیں دکھایا گیا کہ اسے اس بار 150 سے زائد نشستوں پر کامیابی ملے گی ۔ چیف منسٹر گجرات وجئے روپانی نے تاہم ایگزٹ پولس کے بعد اس یقین کا اظہار کیا کہ بی جے پی کو 150 سے زائد نشستوں پر کامیابی حاصل ہوگی ۔ انہوں نے ایگزٹ پولس کے ظاہر کردہ نشستوں کی تعداد کو کم بتایا اور کہا کہ بی جے پی اس سے بہتر مظاہرہ کرے گی ۔ علاوہ ازیں ایگزٹ پولس کے مطابق بی جے پی کو ہماچل پردیش میں بھی کامیابی مل رہی ہے ۔ ٹائمز آف انڈیا آن لائن۔ سی ووٹر ایگزٹ پولس کے مطابق بی جے پی کو ریاست میں 41 نشستوں پر کامیابی حاصل ہوگی جبکہ سابقہ اسمبلی میں 36 نشستیں رکھنے والی کانگریس کو گیارہ نشستوں کا نقصان ہوگا اور وہ 25 نشستوں پر سمٹ جائے گی۔ ایگزٹ پول کے مطابق اس پہاڑی ریاست میں بی جے پی کو اچھی کامیابی ملے گی۔ سابق میں 26 نشستیں رکھنے والی بی جے پی کو اس بار 15 نشستوں کا فائدہ ہوگا ۔ اگر ایگزٹ پولز کے اعداد و شمار صحیح ثابت ہوتے ہیں تو بی جے پی کو سادہ اکثریت کیلئے درکار 35 نشستوں سے بھی چھ زیادہ نشستیں حاصل ہوجائیں گی ۔ کہا گیا ہے کہ بی جے پی کے محصلہ ووٹوں کے تناسب میں بھی اس بار اضافہ ہوا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس ریاست میں کانگریس کے ووٹوں کے تناسب میں بھی اضافہ ہوگا۔ اس کے باوجود اسے 11 نشستوں کا نقصان برداشت کرنا پڑے گا۔

TOPPOPULARRECENT