Monday , June 18 2018
Home / Top Stories / گجرات ماڈل دو تا تین صنعتکاروں پر مرکوز

گجرات ماڈل دو تا تین صنعتکاروں پر مرکوز

نئی دہلی ۔ 12 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : نریندر مودی کے قریب تصور کئے جانے والے عدانی گروپ پر شدید تنقید کرتے ہوئے راہول گاندھی نے آج کہا کہ ودودرہ کے رقبہ کے مساوی زمین اس گروپ کو معمولی قیمت پر دیدی گئی ۔ یہی نہیں بلکہ ممبئی کی ساحلی پٹی کے مساوی گجرات کی ساحلی پٹی بھی اس گروپ کو ارزاں قیمت پر حوالے کردی گئی ۔ انہوں نے عدانی گروپ کا نا

نئی دہلی ۔ 12 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : نریندر مودی کے قریب تصور کئے جانے والے عدانی گروپ پر شدید تنقید کرتے ہوئے راہول گاندھی نے آج کہا کہ ودودرہ کے رقبہ کے مساوی زمین اس گروپ کو معمولی قیمت پر دیدی گئی ۔ یہی نہیں بلکہ ممبئی کی ساحلی پٹی کے مساوی گجرات کی ساحلی پٹی بھی اس گروپ کو ارزاں قیمت پر حوالے کردی گئی ۔ انہوں نے عدانی گروپ کا نام نہیں لیا اور کہ کیا آپ جانتے ہیں کہ ودودرا کے رقبہ کے مساوی زمین دی گئی ۔ کیا آپ جانتے ہیں کتنی قیمت وصول کی گئی ؟

صرف 300 کروڑ روپئے ۔ اس طرح ممبئی کے مساوی ساحلی پٹی بھی انہیں دیدی گئی ۔ آج تک کو انٹرویو کے دوران جب ان سے پوچھا گیا کیا ان کا اشارہ عدانی گروپ کی طرف ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ کسی کا نام لینا نہیں چاہتے ۔ ودورا کا رقبہ 149 مربع کیلو میٹر اور ممبئی ساحلی پٹی 167 کیلو میٹر طویل ہے ۔ راہول گاندھی نے کہا کہ گجرات نے چھوٹی صنعتوں اور تحریکوں جیسے امول وغیرہ سے ترقی کی ۔

آج کا گجرات ماڈل اگر دیکھیں تو ایک صنعتکار کا ٹرن اوور 3000 کروڑ روپئے سے بڑھ کر 40,000 کروڑ روپئے ہوگیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مودی کا معاشی ماڈل یہی ہے کہ ریاست کی ساری دولت دو یا تین افراد کو دیدی جائے ۔ یہ ذہنیت ملک کے لیے انتہائی خطرناک ہے اور وہ اس کے خلاف جدوجہد کرتے رہیں گے ۔ راہول گاندھی نے مودی کے ترقیاتی ماڈل کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ گجرات کی حقیقت یہ ہے کہ دو تا تین صنعت کار ترقی کررہے ہیں اور عوام مررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یو پی اے حکومت نے پیشرو این ڈی اے سے زیادہ بہتر مظاہرہ کیا ہے ۔۔

امیٹھی سے پرچہ نامزدگی داخل
امیٹھی 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے حلقہ امیٹھی نے آج اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا جس کی وہ لوک سبھا میں دو مرتبہ نمائندگی کرچکے ہیں اور توقع ظاہر کی کہ لگاتار تیسری مرتبہ بھی وہ اس علاقہ سے منتخب ہوجائیں گے۔ ریٹرننگ آفیسر کے اجلاس پر پرچہ نامزدگی کے ادخال کے موقع پر راہول اپنی والدہ، بہن پرینکا، بہنوائی رابرٹ ودرا کے ساتھ تھے۔ راہول نے بعدازاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے اترپردیش کے اس حلقہ سے اپنی کامیابی کا یقین ظاہر کیا۔ حلقہ امیٹھی جو نہرو ۔ گاندھی خاندان کا طاقتور گڑھ سمجھا جاتا ہے جہاں سے راہول کے خلاف عام آدمی پارٹی نے کمار وشواس اور بی جے پی نے سمرتی ایرانی کو امیدوار نامزد کیا ہے۔ راہول نے کہاکہ امیٹھی کے عوام سے ان کے خاندانی روابط ہیں اور وہ وہاں سے شاندار فتح حاصل کریں گے۔ راہول نے کہاکہ اُنھوں نے امیٹھی کی ترقی کے لئے تین کام کئے ہیں۔ خواتین اداروں کو بااثر بنایا گیا۔ ریلوے کو وسعت دی گئی، سڑکوں کو قومی شاہراہوں سے مربوط کیا گیا اور فوڈ پارکس قائم کئے گئے۔ نوجوانوں کو روزگار کے مزید مواقع فراہم کرنے کے لئے وہ مستقبل میں بھی ایسے ہی کام کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT