Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / گجرات میں بی جے پی کی کامیابی پر ہاردک پٹیل پر مقدمات؟

گجرات میں بی جے پی کی کامیابی پر ہاردک پٹیل پر مقدمات؟

بی جے پی کو پریشان کرنے پر نئی حکمت ، ہاردک پٹیل کے جلسوں و ریالیوں سے بی جے پی کو فکر لاحق
حیدرآباد۔11ڈسمبر(سیاست نیوز) گجرات انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی کامیابی کی صورت میں ہاردک پٹیل کو عصمت ریزی کے مقدمات کا سامنا کرنا پڑے گا! بھارتیہ جنتا پارٹی گجرات انتخابات کے دوران پارٹی کو مشکلات کا سامنا کرنے پر مجبور کرنے والے ہاردک پٹیل کو مشکلات میں پھنسانے کی کوشش میں مصروف ہوچکی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ ریاست میں حکومت کی تشکیل کے بعد سے انہیں ہراسانی کے نئے دور کا آغاز کیا جائے گا۔ ہاردک پٹیل جو کہ سابق میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے ہمدردوں میں رہے ہیں اور کیشو بھائی پٹیل جیسے قائدین کے ساتھ ان کے خاندان نے بی جے پی کیلئے کام کیا ہے اب یہ کہہ رہے ہیں کہ بھارتیہ جنتا پارٹی نے پٹیل برادری کو دھوکہ دیا ہے اور بھارتیہ جنتا پارٹی میں اب غنڈہ عناصر قیادت کر رہے ہیں۔ غنڈہ عناصر کی قیادت میں انتخابات لڑ رہی بھارتیہ جنتا پارٹی کے الزام کے ساتھ ہاردک پٹیل واضح طور پر یہ کہہ رہے ہیں کہ وہ بھارتیہ جنتا پارٹی صدر امیت شاہ کو غنڈوں میں شمار کرتے ہیں اور بھارتیہ جنتا پارٹی اس وقت تک ان کیلئے ایک قابل اعتماد سیاسی جماعت تھی جب تک اس جماعت میں کیشو بھائی پٹیل اور اٹل بہاری واجپائی جیسے قائدین ہوا کرتے تھے لیکن اب بھارتیہ جنتا پارٹی دھوکہ بازوں اورغنڈہ عناصر کی سیاسی جماعت بن چکی ہے۔ ہاردک پٹیل کے جلسوں اور ریالیوں میں آنے والے ہجوم کے سبب بھارتیہ جنتا پارٹی کو فکر لاحق ہونے لگی ہے لیکن اس کے باوجود بی جے پی قائدین اپنی کامیابی کے متعلق مطمئن ہیں اور اس بات کی سازش میںمصروف ہیں کہ انتخابات کے بعد کس طرح سے ہاردک پٹیل کو پریشان کیا جا ئے۔ گجرات انتخابات کے پہلے مرحلہ کی تکمیل کے فوری بعد اس بات کی قیاس آرائیاں کی جانے لگی ہیں کہ ریاست گجرات کی انتخابی مہم کے دوران کانگریس کی تائید کرنے والے ہاردک پٹیل کو عصمت ریزی کے مقدمہ میں پھانسا جائے گا۔ سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ ریاست گجرات میں انتخابی نتائج کے بعد ہاردک پٹیل کے مستقبل کے متعلق ابھی سے چہ میگوئیاں کی جانے لگی ہیں اور ان کے قریبی حلقہ کو توڑ نے کی کوشش کی جا رہی ہے تاکہ کسی بھی صورت میں پٹیل تحفظات تحریک باقی نہ رہے ۔ تحفظات کے سلسلہ میں مرکزی حکومت نے یہ واضح کردیا ہے کہ قانونی اعتبار سے تحفظات 50 فیصد سے تجاوز نہیں کرسکتے اور حکومت کا کوئی منصوبہ نہیں ہے کہ اس سلسلہ میں کوئی ترمیم کی جائے مرکزی وزیر فینانس کے اس بیان کے بعد پٹیل تحفظات کے سلسلہ میں حکومت کا موقف واضح ہوگیا ہے جس کے سبب ہاردک پٹیل کا یہ احساس ہے کہ پٹیل برادری اس مسئلہ پر بھارتیہ جنتا پارٹی کو اپنی طاقت کا اندازہ کروانے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھے گی۔

TOPPOPULARRECENT