Thursday , September 20 2018
Home / Top Stories / گجرات میں ترقی کا کوئی ثبوت نہیں، دورہ کو روکنے کی کوشش:کجریوال

گجرات میں ترقی کا کوئی ثبوت نہیں، دورہ کو روکنے کی کوشش:کجریوال

ردھن پور۔ 5۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام)چیف منسٹر گجرات نریندر مودی پر ان کی ہی ریاست میں شدید تنقید کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال نے کہا کہ بی جے پی وزارت عظمیٰ کے امیدوار ان کے دورہ گجرات کو روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ پولیس نے انہیں مختصر طور پر حراست میں لینے کے بعد رہا کردیا تھا ۔ کجریوال نے کہا کہ گجرات میں انہیں ترقی کا کوئ

ردھن پور۔ 5۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام)چیف منسٹر گجرات نریندر مودی پر ان کی ہی ریاست میں شدید تنقید کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال نے کہا کہ بی جے پی وزارت عظمیٰ کے امیدوار ان کے دورہ گجرات کو روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ پولیس نے انہیں مختصر طور پر حراست میں لینے کے بعد رہا کردیا تھا ۔ کجریوال نے کہا کہ گجرات میں انہیں ترقی کا کوئی ثبوت نہیں ملا، جیسا کہ چیف منسٹر دعویٰ کر رہے ہیں۔ انہوں نے گجرات کے اپنے چار روزہ دورہ کا آغاز کیا تاکہ مودی کے اس دعوے کی تصدیق کی جاسکے کہ گجرات میں پانی ، برقی ، تعلیم اور ریاستی عوام کے صحت کا خاص خیال رکھا گیا ہے۔ دہلی کے سابق چیف منسٹر کو ردھن پور پولیس اسٹیشن میں کچھ دیر کیلئے حراست میں رکھا گیا۔ نصف گھنٹے کے بعد انہیں رہا کردیا گیا۔ عام آدمی پارٹی کے ریاستی کنوینر سکھ دیو پٹیل نے دعویٰ کیا کہ کجریوال کو گرفتار کیا گیا تھا

لیکن پولیس نے اس کی تردید کی اور کہا کہ اس نے کجریوال کو رابطہ اخلاق کے مسئلہ پر تھوڑی دیر کیلئے حراست میں لیا تھا۔ کجریوال نے الزام عائد کیا کہ یہ پولیس اوپر سے آنے والے احکامات پر عمل کر رہی ہے ۔ بی جے پی کے ورکرس اور عام آدمی پارٹی کے کارکنوں کے درمیان گھمسان کی لڑائی ہوئی ۔ بی جے پی ارکان نے اروند کجریوال کی کار پر حملہ کیا اور شیشے توڑ دیئے ۔ عام آدمی پارٹی قائد اروند کجریوال گجرات کے دورہ پر ہیں تاکہ چیف منسٹر نریندر مودی کے ریاست کی ترقی کے دعوؤں کا تخمینہ کرسکیں۔ اُنھیں آج نرمدا بچاؤ آندولن کی قائد میدھا پاٹکر کو لوک سبھا انتخابات کے لئے امیدوار بنانے پر احتجاجی مظاہرہ کا سامنا کرنا پڑا۔ جب وہ اور اُن کی ٹیم عام آدمی پارٹی کارکنوں کے ساتھ شنکیشور دیہات کا موڑ مڑرہی تھی تو 10 تا 12 لبِ سڑک کھڑے ہوئے دیہاتیوں نے کجریوال کا استقبال سیاہ پرچم لہراتے

اور اُنھیں گجرات کا دشمن قرار دیتے ہوئے نعرہ بازی سے کیا۔ وہ ریاست کا چار روزہ دورہ کررہے ہیں۔ ایک دیہاتی کے اِس سوال پر کہ وہ احتجاج کیوں کررہا ہے، اُس نے کہاکہ وہ بی جے پی کے نظریہ کا حامی ہے لیکن کسی پارٹی سے اُس کی وابستگی نہیں ہے۔ بیچارہ جی سے موصولہ اطلاع کے بموجب اروند کجریوال نے بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کے خلاف مقابلہ کے بارے میں سوال کا واضح جواب دینے سے گریز کیا اور صرف اتنا کہاکہ دیکھیں گے۔ انتخابی مقابلہ کرنا یا نہ کرنا بنیادی مسئلہ نہیں ہے۔ اُن کی پارٹی قبل ازیں اعلان کرچکی ہے کہ کجریوال مودی کے خلاف مقابلہ کریں گے۔ بشرطیکہ وہ گجرات کے باہر کسی بھی جگہ سے مقابلہ کریں۔ قیاس آرائیاں گرم ہیں کہ مودی یوپی کی کسی نشست اور گجرات کی ایک نشست سے مقابلہ کریں گے۔ تاہم بی جے پی کا ادعا ہے کہ اِس مسئلہ پر ہنوز فیصلہ نہیں کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT