Thursday , October 18 2018
Home / سیاسیات / گجرات میں تشدد بی جے پی کی سازش :کانگریس

گجرات میں تشدد بی جے پی کی سازش :کانگریس

نئی دہلی، 12 اکتوبر ( سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی نے ناکامیوں اور اسکامس سے توجہ ہٹانے گجرات میں تشدد کی سازش کی اور چیف منسٹر وجئے روپانی نے صورت حال کو کنٹرول میں لانے کوئی قدم نہیں اٹھایا لہذا، انہیں فوری بیدخل کیا جائے ۔کانگریس ترجمان شکتی سنگھ گوہل نے کہا کہ اس سازش میں بی جے پی کے لیڈر اور ممبر اسمبلی شامل رہے اور ان کے خلاف کارروائی کی جانی چاہئے ۔ انہوں نے ایک ویڈیو بھی صحافیوں کو دکھایا جس میں ہمت نگر رکن اسمبلی راجندر سنگھ چاوڑا لوگوں بھڑکا رہے ہیں کہ گجرات میں فیکٹریوں میں مقامی لوگوں کو 80 فیصد روزگار دیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے دعوی کیا کہ اسی ویڈیو میں وہاں موجود ایک بھیڑ میں سے تشدد کو بھڑکانے والی آواز آرہی ہے۔مسٹر گوہل نے کہا کہ گجرات میں اترپردیش اور بہار کے لوگوں کے ساتھ جو تشدد کیا جا رہا ہے وہ سیاست پر مبنی ہے اور بی جے پی نے سیاسی فائدہ حاصل کرنے یہ سازش کی۔ کانگریسی رکن اسمبلی الپیش ٹھاکر کی اشتعال انگیز سرگرمیوں سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی قانون ہاتھ میں نہیں لینا چاہئے اور کانگریس کبھی اس کی اجازت نہیں دیتی اور ایسے واقعات کی مذمت کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شروع میں الپیش نے شاید غصہ میں کچھ غلط کر دیا ہو لیکن بعد میں وہ جس طرح سے صورت حال سلجھانے کی مہم میں جٹ گئے وہ سب نے دیکھا اور اسے دیکھتے ہوئے ہی بی جے پی کی ہمت ان کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی نہیں ہوئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT