Sunday , June 24 2018
Home / Top Stories / گجرات میں سب خوش ہیں تو ’وکاس ‘کہاں

گجرات میں سب خوش ہیں تو ’وکاس ‘کہاں

وزیراعظم مودی پر آر جے ڈی سربراہ لالویادو کی تنقید
پٹنہ، 30 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) گجرات اسمبلی انتخابات پر جاری سیاسی گھمسان کے درمیان راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو پرساد یادو نے وزیر اعظم نریندر مودی پر بالواسطہ حملہ بولتے ہوئے ان کے ’وکاس کے ماڈل‘کو چیلنج کیا اور پوچھا کہ انتخابی جلسوں میں فالتو لن ترانیوں کی بجائے انہیں روزگار، گھر، اسکول اور صحت جیسی سنجیدہ ایشوز پر اپنی بات رکھنی چاہئے ۔لالو نے آج مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر اپنے معروف اسٹائل میں وزیر اعظم پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ ’’نانا پرنانا، دادا دادی، چاچا-چاچی جیسی فالتو بیان بازی کے بجائے مودی کیوں نہیں بتاتے کہ وہاں انہوں نے کتنے گھر، روزگار اور اسکول اسپتال دئیے ‘‘۔انہوں نے وزیر اعظم کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہمت ہے تو وزیر اعظم اپنی ریالیوں میں لوگوں کوگڈس اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) اور نوٹ بندی کے فائدے بتائیں۔ ہر طرف مہنگائی کی مار سے عوام دوچار ہے لیکن وزیر اعظم مہنگائی کے معاملے پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔آر جے ڈی سربراہ نے کہاکہ وزیر اعظم کہتے ہیں کہ دلت، دیگر پسماندہ طبقات (او بی سی) سمیت تمام طبقات کے لوگ وہاں خوش ہیں، لیکن آخر ترقی کہاں ہے۔ اس سے قبل کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی کے سومناتھ مندر میں داخل ہونے والے تنازعہ میں لالو نے کہا کہ مودی حکومت پارلیمنٹ میں بل منظورکرکے یہ لازمی بنا دیں کہ وہی شخص مندر میں داخل ہو سکتا ہے جس کے نانا پرنانا نے مندر بنوایا ہے . باقی کے لئے نو۔انٹری کا بورڈ لگا دیں۔

TOPPOPULARRECENT