گجرات میں ہوٹلس ‘ ریسارٹس وغیرہ کے پراپرٹی ٹیکس و برقی بل معاف

   

مابعد کورونا وباء ‘ معیشت کے احیاء کیلئے اقدام ۔ تلنگانہ میں بھی ہوٹل مالکین کی حکومت پر نظریں
حیدرآباد۔ کورونا وباء کی شدت میں کمی کے بعد اب مختلف ریاستوں میں مابعد وبائی صورتحال میں معیشت کو بحال کرنے کے اقدامات شروع کردئے گئے ہیں اور اس معاملے میں گجرات نے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے ہوٹلس ‘ ریسارٹس ‘ ریسٹورنٹس ‘ وارٹر پارکس ‘ ملٹی پلیکس اور جمنازیمس کیلئے پراپرٹی ٹیکس اور برقی بلز معاف کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ کہا جا رہا ہے کہ یہ کورونا سے متاثر تاجرین کیلئے بڑی راحت ہے اور اس سے معیشت کے احیاء میں مدد مل سکتی ہے ۔ گجرات میں ان ہوٹلس ‘ ریسارٹس ‘ ریسٹورنٹس وغیرہ سے پراپرٹی ٹیکس وصول کیا جاتا رہا ہے جس کو چیف منسٹر وجئے روپانی نے معاف کردیا ہے ۔ علاوہ ہوٹلس ‘ ریسارٹس ‘ ریسٹورنٹس ‘ وارٹر پارکس ‘ ملٹی پلیکس سے مقررہ شرح سے برقی بلز وصول کئے جاتے تھے تاہم اب ایک سال کیلئے برقی بلز بھی معاف کردینے کا اعلان کیا گیا ہے ۔ واضح رہے کہ گجرات میں بہت سارے مسلمان ‘ ہوٹلس انڈسٹری کا حصہ ہیں اور انہیں بھی فائدہ ہوگا ۔ ملک کی کچھ دوسری ریاستوں میں بھی ہوٹلوں اور ریسارٹس وغیرہ سے پراپرٹی ٹیکس معافی کا اعلان ہوچکا ہے اور کچھ مراعات دی گئی ہیں۔ اسی طرح تلنگانہ میں بھی ہوٹل ‘ ریسارٹس ‘ ریسٹورنٹس مالکین کی جانب سے حکومت سے اپیل کی جا رہی ہے کہ وہ ریاست میں بھی ہوٹل صنعت کیلئے مراعات کا اعلان کرے ۔ پراپرٹی ٹیکس اور برقی بلز کی معافی کیلئے بھی اصرار کیا جا رہا ہے ۔ ہوٹل مالکین کا کہنا ہے کہ کورونا وباء کی وجہ سے وہ بھاری نقصانات کا شکار ہوئے ہیں اور حکومت کو انہیں مراعات فراہم کرنے چاہئیں۔

ADVERTISEMENT