Sunday , June 24 2018
Home / سیاسیات / گجرات کی ترقی مودی کا سفید جھوٹ ، کجریوال کا دعویٰ

گجرات کی ترقی مودی کا سفید جھوٹ ، کجریوال کا دعویٰ

احمدآباد 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کی ترقی کے بارے میں ’’سفید جھوٹ‘‘ بولنے کا نریندر مودی پر الزام عائد کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کجریوال نے آج کہاکہ وہ چیف منسٹر گجرات سے ترقی کے دعوؤں پر تبادلہ خیال کے لئے ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔ سابق چیف منسٹر دہلی نے کہاکہ اُنھوں نے گجرات میں ترقی کے دعوؤں کے بارے میں 16 سو

احمدآباد 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کی ترقی کے بارے میں ’’سفید جھوٹ‘‘ بولنے کا نریندر مودی پر الزام عائد کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کجریوال نے آج کہاکہ وہ چیف منسٹر گجرات سے ترقی کے دعوؤں پر تبادلہ خیال کے لئے ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔ سابق چیف منسٹر دہلی نے کہاکہ اُنھوں نے گجرات میں ترقی کے دعوؤں کے بارے میں 16 سوالات کئے ہیں اور چاہتے ہیں کہ تمام مسائل پر مودی کے ساتھ بات چیت کریں۔ بشرطیکہ اُنھیں فرصت ہو۔ کجریوال گجرات کی ترقی کے مودی کے دعوؤں کی جانچ کے لئے گجرات کے 4 روزہ دورہ پر ہیں۔ اُنھوں نے گیاس کی قیمت کے تعین کا معاملہ اُٹھایا اور کہاکہ اِس بارے میں مودی کو اپنا موقف واضح کرنا چاہئے۔ حکومت گجرات نے مطالبہ کیا ہے کہ گیاس کی قیمت 16 امریکی ڈالر ہونی چاہئے۔ قبل ازیں یو پی اے حکومت نے گیاس کی قیمت 4 ڈالر سے بڑھاکر 8 ڈالر کرنے کی اجازت دی تھی۔

اُنھوں نے الزام عائد کیاکہ حکومت گجرات شمسی توانائی 15 روپئے فی یونٹ خرید رہی ہے جبکہ دیگر مقامات پر اِس کی قیمت 8 روپئے فی یونٹ ہے۔ اُنھوں نے مودی حکومت میں بدعنوان وزراء کا مسئلہ اُٹھاتے ہوئے الزام عائد کیاکہ چیف منسٹر کے مکیش امبانی کے ساتھ روابط ہیں۔ اُنھوں نے سوال کیاکہ بابو بخیریا کو وزیر کیوں بنایا گیا حالانکہ اُنھیں کانکنی میں مجرم قرار دے کر 3 سال کی سزائے قید سنائی گئی ہے اور وہ فی الحال ضمانت پر رہا ہیں۔ دوسرے وزیر پرشوتم سولنکی 450 کروڑ روپئے مالیتی سمکیات اسکینڈل میں مجرم قرار دیئے گئے ہیں، وہ بھی کابینہ میں شامل ہیں۔ کیا 6 کروڑ گجراتیوں میں ایک بھی دیانتدار گجراتی نہیں ہے جسے وزیر بنایا جاسکے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ مکیش امبانی سے مودی کے قریبی تعلقات ہیں جس کی وجہ سے امبانی گھرانے کے داماد کو وزیر بنادیا گیا۔ سورب پٹیل کو گیاس، پٹرول، برقی توانائی اور معدنیات کا قلمدان دیا گیا یعنی قدرتی گیس کے گجرات کے تمام وسائل امبانیوں کے حوالے کردیئے گئے۔

ریاست میں بیروزگاری کی صورتحال قابل رحم ہے۔ حال ہی میں معمولی نوکری کی 1500 جائیدادوں کیلئے 13 لاکھ افراد نے درخواست دی تھی۔ اُس سے گجرات میں بیروزگاری بے انتہا ہونے کا پتہ چلتا ہے۔ سرکاری زیرانتظام کارخانوں میں کنٹراکٹ پر ملازمت کے بارے میں کجریوال نے کہاکہ نوجوانوں کے استحصال کے مودی ہی ذمہ دار ہیں۔ تعلیم یافتہ نوجوانوں کو 3300 روپئے ماہانہ کی معمولی تنخواہ پر عارضی ملازمتیں فراہم کی جارہی ہیں۔ وہ 3300 روپئے میں اپنے خاندان کا خرچ کیسے چلائیں گے۔ اُنھوں نے کہاکہ حال ہی میں عام آدمی پارٹی کارکنوں نے دیہی علاقوں میں تعلیمی سہولتوں کے دعوے کی جانچ کے لئے دیہاتوں کا دورہ کیا۔ سرکاری اسکول بدترین حالت میں ہیں۔ حفظان صحت کا نظام منہدم ہوچکا ہے۔ کاشتکار اپنی اراضی کے جو حکومت نے حاصل کی ہے بہت کم معاوضہ حاصل کرسکے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT