Monday , February 19 2018
Home / Top Stories / گجرات کے چھ اضلاع میں راہول کی انتخابی مہم کا آغاز

گجرات کے چھ اضلاع میں راہول کی انتخابی مہم کا آغاز

 

 

اکشردھام مندر کے درشن پر
بی جے پی کا اعتراض

گاندھی نگر ۔ /11 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے شمالی گجرات کے مشہور اکشردھام مندر کے درشن کے ساتھ آج یہاں اسمبلی انتخابات کیلئے اپنی مہم کا آغاز کیا ۔ اکشردھام مندر سوامی نارائن طبقہ کا ہے جس کے معتقدین میں پٹیل برادری کی کثیر تعداد شامل ہے ۔ /9 ڈسمبر اور /14 ڈسمبر کو دو مرحلوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات سے قبل کانگریس اس برادری کو اپنی طرف راغب کرنے کی کوشش کررہی ہے ۔ راہول گاندھی آج صبح اکشردھام مندر گئے جہاں لارڈ سوامی نارائن کی پوجا کی ۔ بعد ازاں تین روزہ مہم کا آغاز کیا ۔ جس کے تحت چھ اضلاع کا احاطہ کیا جائے گا ۔ بی جے پی نے راہول کے اس اقدام کی مذمت کی اور کہا کہ وہ محض ہندو ووٹوں کی خاطر اسمبلی انتخابات سے قبل مندروں کے درشن کررہے ہیں ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نتن پٹیل نے کہا کہ ’’راہول گاندھی صرف اسمبلی انتخابات سے قبل مندروں کے درشن کررہے ہیں ۔ عوام ان کے ارادے جانتے ہیں کہ دیسی شعبدہ بازی کے ذریعہ وہ ووٹ حاصل کرنا چاہتے ہیں ۔ انہیں کوئی رغبت یا عقیدت نہیں ہے کیونکہ راہول نے اس سے پہلے کے دوروں کے موقع پر کبھی کسی مندر کا درشن نہیں کیا تھا ‘‘ ۔ پٹیل نے کہا کہ ’’ہم چاہتے ہیں کہ کانگریس اپنا فرضی سیکولرازم ترک کرے اور اصل دھارے کی ہندوتوا کا احترام کرے ۔ لیکن ووٹ حاصل کرنے کیلئے ان شعبدہ بازی گجرات میں عام نہیں کرے گی ‘‘ ۔ تاہم کانگریس نے جوابی وار کرتے ہوئے کہا کہ عوام بی جے پی کو سبق سکھائیں گے کیونکہ وہ مندر میں درشن کی مخالفت کررہی ہے ۔ کانگریس کے لیڈر شکتی ہنس گوئل نے کہا کہ ’’آیا کسی نے بھکتی اور عقیدت پر پیٹنٹ (اجارہ داری) حاصل کرلیا ہے ۔ وہ ( بی جے پی) مندر کے درشن کی مخالفت کررہے ہیں ۔ گجرات کے عوام انہیں سبق سکھائیں گے ‘‘ ۔

 

جی ایس ٹی شرح میں کٹوتی راہول کے سبب ہوئی : کانگریس
نئی دہلی ۔ 11 نومبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس نے آج دعویٰ کیا کہ جی ایس ٹی کونسل کا روزآنہ استعمال کے 178 آئٹمس پر ٹیکس شرحوں میں کٹوتی کردینے کا فیصلہ محض اس لئے ممکن ہوا کیونکہ حکومت کو اس کیلئے نائب صدر پارٹی راہول گاندھی نے دباؤ ڈال کر مجبور کیا۔ اور انتخابات والے گجرات میں اُن کی مہم پر جو عوام کا جوش و خروش دیکھنے میں آرہا ہے اُس کی وجہ سے مرکزی حکومت اس طرح کے اقدام کی ترغیب دینے پر مجبور ہوئی ۔ گڈس اینڈ سرویسیس ٹیکس ( جی ایس ٹی ) پر حکومت کے خلاف الزام آرائی میں پیش پیش رہتے ہوئے راہول نے کہا تھا کہ کانگریس جی ایس ٹی کے اعظم ترین زمرے کے تعلق سے 18 فیصدی حد کے لئے جدوجہد جاری رکھے گی ، جو اب 28فیصد ہے ۔ انھوں نے عزم کیا تھا کہ پارٹی یہ کام ضرور کرے گی بشرطیکہ موجودہ طورپر برسراقتدار بی جے پی ایسا کرنے میں ناکام رہتی ہے ۔ انھوں نے اعادہ بھی کیا تھا کہ ہندوستان کو ٹیکس کا سادہ سسٹم درکار ہے ، نہ کہ ’’گبر سنگھ ٹیکس ‘‘ جیسا کہ مودی حکومت کو نشانہ بنانے کیلئے اس ٹیکس سسٹم کی تشریح کی جارہی ہے ۔ کانگریس جنرل سکریٹری انچارج گجرات اشوک گہلوٹ نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ گزشتہ روز جی ایس ٹی کونسل نے ٹیکس شرحوں میں کٹوتی کا جو فیصلہ کیا وہ راہول گاندھی کی طرف سے دباؤ کے سبب ہے اور یہ بھی کہ چناؤ کا سامنا کرنے والی مغربی ریاست میں کانگریس لیڈر کو انتخابی مہم میں عوام کا زبردست ردعمل حاصل ہورہا ہے ۔ گجرات جو وزیراعظم نریندر مودی اور صدر بی جے پی امیت شاہ کی آبائی ریاست ہے ، زائد از دو دہوں سے بی جے پی کی حکمرانی میں ہے اور کانگریس اُسے اقتدار سے بیدخل کرنے ایڑی چوٹی کازور لگارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT