Sunday , December 17 2017
Home / Top Stories / گجرات کے کانگریس ارکان اسمبلی کی تفریح گاہ کے باہر سیر

گجرات کے کانگریس ارکان اسمبلی کی تفریح گاہ کے باہر سیر

گورنر سے ملاقات ، سکریٹریٹ اور اسمبلی کا دورہ ، مجسمہ گاندھی کے روبرو بی جے پی کیخلاف مظاہرہ

بنگلورو ۔ /5 اگست (سیاست ڈاٹ کام) گجرات کے کانگریس ارکان اسمبلی جو گزشتہ ایک ہفتہ سے بنگلورو کے ایک تفریحی گیسٹ ہاؤز میں کیمپ کئے ہوئے تھے آج پہلی مرتبہ باہر نکلے اور گورنر سے ملاقات کے علاوہ ریاستی اسمبلی اور سکریٹریٹ کا دورہ کیا ۔ گجرات میں /8 اگست کو ہونے والے راجیہ سبھا انتخابات میں کانگریس کی صدر سونیا گاندھی کے پولیٹیکل سکریٹری احمد پٹیل مقابلہ کررہے ہیں اور بی جے پی کی جانب سے کانگریس کے ارکان اسمبلی کو لالچ یا دھمکی کے ذریعہ انحراف پر مجبور ہونے سے بچانے کیلئے کانگریس نے /29 جولائی کو اپنے 44 ارکان اسمبلی کو بنگلورو روانہ کردیا تھا ۔ یہ ارکان اسمبلی آج پہلی مرتبہ تفریح گاہ سے باہر آئے اور راج بھون پہونچکر گورنر واجو بھائی والا سے ملاقات کی ۔ کانگریس ذرائع نے کہا کہ یہ خیرسگالی ملاقات تھی کیونکہ واجو بھائی والا بھی گجرات سے تعلق رکھتے ہیں جو ماضی میں ریاستی اسمبلی کے اسپیکر اور وزیر فینانس بھی رہ چکے ہیں ۔ چنانچہ ارکان اسمبلی سے ان کے اچھے روابط ہیں ۔ کانگریس کے قومی ترجمان اور گجرات کے رکن اسمبلی شکتی سنہہ گوہل نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’کرناٹک کے گورنر عزت مآب واجو بھائی والا نے ہم سب سے فرداً فرداً ملاقات کی ۔ یہ ایک خیرسگالی ملاقات اور جمہوریت کا جذبہ ہے ‘‘ ۔ یہ ارکان اسمبلی راج بھون سے ودھان سودھا (مقننہ) اور ریاستی سکریٹریٹ لے جائے گئے جہاں وزیر توانائی ڈی کے شیوا کمار بھی ان کے ساتھ ہوگئے ۔ شیوکمار اپنے گھر اور دیگر کئی جائیدادوں پر انکم ٹیکس کے دھاوؤں کے بعد پوچھ گچھ کے جوابات میں مصروف تھے ۔ شیوا کمار ہی گجرات کے ان 44 ارکان اسمبلی کو متحد رکھنے کے انتظامات کی نگرانی کررہے ہیں ۔ انکم ٹیکس عہدیداروں کی لگاتار تین دن تک پوچھ گچھ کے بعد وہ آج ہی اپنے گھر سے باہر نکل سکے تھے ۔ تفریح گاہ سے پہلی مرتبہ باہر نکلنے والے کانگریس کے ارکان اسمبلی نے بعد ازاں شیوا کمار کے ساتھ اسمبلی کے قریب واقع مہاتما گاندھی کے مجسمہ کے درشن کیا اور بی جے پی کی طرف سے انہیں منحرف کرنے کی مبینہ کوششوں کے خلاف علامتی احتجاج کیا ۔ اس موقع پر انہوں نے مہاتما گاندھی کا پسندیدہ بھجن ’’رگھوپتی راگھو راجہ رام ‘‘ کا پاٹھ بھی کیا ۔

TOPPOPULARRECENT