Tuesday , December 18 2018

گجرات کے گاؤں میں پانی کی قلت ‘ کنواروںکی شادی مسئلہ

جرات۔10مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) گجرات کو بھلے ہی پورے ہندوستان کے وکاس کا ماڈل بتایا جارہا ہو لیکن وکاس کا آئینہ دکھانے والے گجرات کے ایک گاؤں کی کہانی ایسی ہے‘ جہاں گندا پانی لوگوں کیلئے پریشانی کا سبب بنا ہوا ہے ۔ ایک طرف حہاں گرمی میں لوگوں کو پینے کے پانی کیلئے پریشان ہونا پڑتا ہے‘ وہیں اس گاؤں میں رہنے والوں کو گندے پانی کی مصیبت سے دوچار ہونا پڑتا ہے ۔ یہ کہانی گجرات کے کسی اندرونی گاؤں کی نہیں بلکہ احمدآباد سے 30 کلومیٹر کی دوری پر موجود چوسر گاؤں کی ہے ‘ گندے پانی کی وجہ سے جہاں گاؤں کے لوگوں کو مشکلات سے دوچار ہونا پڑتا ہے ‘ وہیں اس گاؤں میں رہنے والے لوگوں کی شادی بھی نہیں ہورہی ہے ۔ گرمی کے موسم کی شروعات ہوتے ہی لوگوں کو پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑتا ہے لیکن احمدآباد کے بالکل پاس میں ایک ایسا گاؤں ہے جہاں پر پینے کے پانی کی قلت کے ساتھ ہی ساتھ گندے پانی سے پریشان و دوچار ہونا پڑرہا ہے ۔ گندے پانی کا استعمال کرنے کی وجہ سے چوسر گاؤں میں رہنے والے لوگ کئی بیماریوں کا شکار بھی ہوچکے ہیں‘ اتنا ہی نہیں گندے پانی کی وجہ سے ہونے والی بیماری کو لیکر اس گاؤں میں رہنے والے لوگوں کی شادی بھی نہیں ہورہی ہے ۔ چوسر گاؤں میں گندے پانی کا مسئلہ کوئی آج کی بات نہیں ہے بلکہ 35سال پرانی ہے ۔ اس گاؤں میں رہنے والی خواتین کے سونے چاندی کے زیورات بھی گندے پانی کی وجہ سے سیاہ پڑجاتے ہیں ۔ چوسر گاؤں میں رہنے والے لوگ کھیتی کر کے اپنی زندگی گزارتے ہیں ۔ اس گاؤں میں گندے پانی کا مسئلہ اس حد تک بڑھ گیا ہے کہ لوگوں کو گاؤں چھوڑ کر جانے کو مجبور ہونا پڑرہا ہے ۔ علاقہ کے سماجی کارکنجیش کا کہنا ہے کہ گندے پانی کے مسئلہ کو لیکر گذشتہ 35سالوں سے شکایت کی جارہی ہے لیکن حکومت ہماری شکایات پر توجہ نہیں دے رہی ہے ‘ جس کی وجہ سے مجبور ہوکر لوگ گاؤں چھوڑ کر جارہے ہیں ۔ گجرات کو وبھلے ہی وکاس کا ماڈل بتایا جارہا ہو لیکن ایسا لگتا ہے کہ چوسر گاؤں میں وکاس پہنچتے پہنچتے اپنا دم توڑ دیتا ہے اور اسی لئے گاؤں کے لوگوں کو گندے پانی کی پریشانی سے دوچار ہونا پڑتا ہے ۔ صرف گندا پانی گاؤں میں رہنے والے لوگوں کیلئے مصیبت کا سبب نہیں ہے بلکہ اس گاؤں میں رہنے والے لوگوں کی گندے پانی کی وجہ سے شادی بھی نہیں ہورہی ہے ‘ اس لئے کہا جاسکتا ہے کہ چوسر گاؤں میں پانی ایک ویلن کا کردار ادا کرتا ہوں نظر آرہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT